امریکا کے بعد برطانیہ میں بھی بھارتیوں کی پاکستان مخالف پٹیشن مسترد

ویب ڈیسک  بدھ 19 اکتوبر 2016
پاکستان نے دہشت گردی روکنے کے لیے قابل قدر کوششیں کی ہیں، برطانوی وزارت خارجہ۔ فوٹو : فائل

پاکستان نے دہشت گردی روکنے کے لیے قابل قدر کوششیں کی ہیں، برطانوی وزارت خارجہ۔ فوٹو : فائل

لندن: امریکا کے بعد برطانیہ نے بھی بھارتی انتہاپسندوں کی پاکستان مخالف پٹیشنز مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان کی دہشت گردی کے خلاف قابل قدر قربانیاں اور خدمات ہیں اور برطانیہ اس کا اعتراف کرتا ہے۔

بھارتی انتہاپسندوں نے امریکا کی طرح برطانیہ میں بھی پاکستان مخالفت نفرت آمیز جذبات بھڑکانے کے لیے مہم شروع کر رکھی ہے جس میں پاکستان کے خلاف برطانوی پارلیمنٹ میں بحث کروانا مقصود ہے لیکن جس طرح امریکا میں آن لائن پٹیشن کو مسترد کردیا گیا اسی طرح برطانیہ میں بھی بھارتی نژاد برطانوی شہریوں کے علاوہ کسی قابل ذکر شخص کے دستخط نہیں ہو سکے۔

برطانوی وزارت خارجہ اور کامن ویلتھ افیئرز نے اس درخواست کو اس نوٹ کے ساتھ مسترد کردیا ہے کہ پاکستان نے دہشت گردی روکنے کے لیے قابل قدر کوششیں کی ہیں اور پاکستان کی ان قربانیوں کا اعتراف برطانیہ کرتا ہے۔

اس خبر کو بھی پڑھیں : امریکا نے بھارتی پٹیشن مسترد کردی

 واضح رہے کہ چند روز قبل امریکا میں بھی بھارت کی جانب سے پاکستان کے خلاف آن لائن پٹیشن دائر کی گئی تھی جس میں کہا گیا تھا کہ پاکستان کو دہشت گردوں کی سرپرستی کرنے والی ریاست قرار دیا جائے جس کو امریکا نے مسترد کردیا تھا۔



ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔