تازہ ترین 
< >
rss

 شیریں حیدر

قیامت کسے کہتے ہیں…

کوئی اس نئے برس کے پہلے چند دن کے اخبارات کو دیکھے تو اس کا اس ملک کے بارے میں کیا تاثر ہوتا ہو گا؟

January 26, 2014

ملنے کے نہیں … نایاب ہیں ہم!

کون سے بچے ہیں جو اقدار اور روایات کے اتنے پابند ہیں آج کے مادی دور میں۔۔۔

January 18, 2014

ابا جی… درد تھمتا ہی نہیں!!!

تین بیٹوں کے باوصف ابا جی ہمیشہ مجھے بیٹا کہتے تھے… بیٹا بھی نہیں بلکہ اپنا شیر بیٹا۔۔۔

January 12, 2014

نئے سال کا ٹمٹماتا سورج…

جس اقتدار کو مال غنیمت سمجھ کر ہر کوئی اپنی جھولیاں بھرتا ہے، انھیں اس ایک ایک پائی کا حساب دینا ہے

January 4, 2014

اجازت ضروری ہے…

مہمان اللہ کی رحمت ہوتے ہیں مگر مہمان اور بلائے جان بننے میں بہت معمولی سا فاصلہ ہے، اسے پاٹنے سے گریز کریں۔

December 29, 2013

آج تم بہت یاد آئے مارٹن…

دنیا کے ترقی یافتہ ترین ملکوں میں بڑی سے بڑی فرموں کے CEO ہر روزصبح اپنے دفتر آ کر سب سے پہلے اپنا دفتر صاف کرتے ہیں

December 22, 2013

میں تیرے شہر سے پھر گزرا تھا…

ہم محکموں کی خرابی کا شور تو مچاتے ہیں لیکن محکموں میں اگرکوئی اچھا کام کررہا ہو تو اس کا اعتراف اورتعریف ضرور کریں

December 14, 2013

مطلقہ شہر…

اگرچہ بہت سے مسائل موجودہ حکومت کو وراثت میں ملے اور بہت سے ایسے مسائل ہیں جو اس حکومت کے بھی اپنے پیدا کردہ ہیں

December 8, 2013

Brass shines under sunshine!

یہی دنیا کا نظام ہے۔ کمان کی چھڑی… ایک ہاتھ سے دوسرے ہاتھ میں منتقل ہونے سمے کتنی دھڑکنیں بے ترتیب ہوئی ہوں گی

November 30, 2013

مسائل کے انبار کی چوٹی پر…

ہم جو ایک دستر خوان پر بہن بھائیوں کی طرح بیٹھ کر کھاتے تھے، اس وقت ایک دوسرے کے گلے کاٹنے لگے ہیں

November 23, 2013
37