تازہ ترین 
< >
rss

 رئیس فاطمہ

رُباء کی کہانی

23 سال کی عمر میں رباء جس صورتحال سے دوچار ہے اسے دیکھ کر کئی سوال ذہن میں اٹھتے ہیں

October 22, 2017

حالات بدل نہیں سکتے

ہم بار بار بے وقوف بنتے ہیں، ہر بارکٹھ پتلیاں میدان میں اتار دی جاتی ہیں

October 15, 2017

سائبر کرائم اور نوجوان نسل

نوجوان نسل ان ڈراموں کے کرداروں سے متاثر ہوکر اپنا حلیہ بھی ویسا ہی کرلیتی ہے۔

October 8, 2017

دہشت گردی کے شیش ناگ   (آخری حصہ)

پڑھے لکھے اور ڈگری یافتہ نوجوانوں کا دہشتگردی میں ملوث ہونا انتہائی تشویشناک بات ہے۔

October 1, 2017

انتہا پسندی کے شیش ناگ (پہلاحصہ)

طلبا یونین ختم ہونے سے سارا اقتدار پرنسپل کے پاس آگیا اور پرنسپل وہ کرتا جو ڈنڈا بردار طالب علم چاہتے

September 24, 2017

کیا واقعی ’’صفائی نصف ایمان ہے؟‘‘

دراصل ہماری قوم میں نمود و نمائش کا جذبہ بہت زیادہ ہے۔

September 17, 2017

مٹے نامیوں کے نشاں کیسے کیسے؟

حکمران طاقت کے نشے میں چور رہتا ہے۔ عوام کو چھوت کی بیماری سمجھتا ہے، ان سے دور رہتا ہے۔

September 10, 2017

تمنا جو نہ پوری ہو وہ کیوں پلتی ہے سینے میں

چھوٹی چھوٹی محرومیاں جمع ہو کر کسی بڑے حادثے کا سبب بنتی ہیں۔

August 27, 2017

رو بہ زوال معاشرہ؟

مفلسی ہر احساس پر بھاری ہوتی ہے۔ بڑھتے ہوئے جرائم کی شرح کے پیچھے بنیادی سبب مہنگائی اور بے روزگاری ہے۔

August 20, 2017

بدنام اگر ہوں گے تو کیا نام نہ ہوگا

مجھے کہنے دیجیے کہ لوگ باریوں کے کھیل سے بے حد دل برداشتہ ہوچکے ہیں قوم کو عمران خان سے کافی امیدیں ہیں۔

August 13, 2017
5