امریکی لڑکی نے ٹیٹرس گیم سے شادی کا فیصلہ کرلیا

ویب ڈیسک  جمعرات 11 جنوری 2018
نورالماہ جبین حسن اپنے پسندیدہ کیلکولیٹر کے ساتھ جس سے وہ بے انتہا محبت کرتی تھیں۔ فوٹو: بشکریہ اورلینڈو ٹائمز

نورالماہ جبین حسن اپنے پسندیدہ کیلکولیٹر کے ساتھ جس سے وہ بے انتہا محبت کرتی تھیں۔ فوٹو: بشکریہ اورلینڈو ٹائمز

 واشنگٹن: امریکا کی 20 سالہ ریاضی کی طالبہ نورالماہ جبین حسن نے کہا ہے کہ وہ جلد ایک پرانے گیم اینڈ واچ ’ٹیٹرس‘ سے شادی کرلیں گی۔

امریکی میڈیا کے مطابق وہ ایک نوجوان سے محبت کرتی تھیں جو حادثے میں ہلاک ہوگیا جس کے بعد انہیں اپنے کیلکولیٹر سے محبت ہوگئی تھی جو صفائی کے دوران ٹوٹ کر گرگیا تھا اور اب وہ ٹیٹرس کی محبت میں گرفتار ہیں۔

دنیا بھر میں بعض لوگ ایسے ہیں جو نفسیاتی طور پر مختلف اشیا کی محبت میں گرفتار ہوتے ہیں جسے ’اوبجیکٹوفل‘ یا ’اوبجیکٹم سیکشوئل‘ بھی کہا جاتا ہے۔ اس میں لوگ بے جان اشیا یا آلات کو اپنے پاس رکھتے ہیں اور ان سے محبت کرتے ہیں۔ ماہ جبیں نے اعلان کیا ہے کہ وہ یونیورسٹی سے گریجویشن کے بعد ٹیٹرس سے شادی کرلیں گی۔

ماہ جبین کا کہنا ہے کہ میں نے ٹیٹرس کے بارے میں بہت کچھ سنا تھا، جب میں نے یہ گیم کھیلا تو یہ مجھے بہت اچھا لگا۔ یہ گیم دماغ کو تحریک دیتا ہے اور اب میں اس سے عین وہی تعلق قائم کرچکی ہوں جو انسانوں کے درمیان ہوتا ہے اور یہ میرے لیے بہت موزوں ہے۔

ان دونوں کے درمیان ستمبر 2016ء کو محبت شروع ہوئی اور اب وہ روزانہ 12 گھنٹے ٹیٹرس کھیلتی ہیں خواہ وہ آن لائن ہوں یا گیم بوائے پر۔ ماہ جبیں اب اس گیم کے بغیر سوتی بھی نہیں ہیں اور وہ اسے ایک مرد تصور کرتی ہیں۔

ماہ جبیں کہتی ہیں کہ انہیں انسانوں سے بہت کم لگاؤ ہے اور وہ ان سے دور بھاگتی ہیں۔ اس سے قبل وہ اپنے کیلکولیٹر سے کھیلتی تھیں اور اس کے بٹن دبا کر اطمینان محسوس کرتی تھیں، اور اب وہ ٹیٹرس سے لگاوٹ رکھتی ہیں۔

ماہ جبیں کا مزید کہنا ہے کہ ٹیٹرس سے شادی کی تقریب باقاعدہ قانونی ہوگی اور میں اپنے دوستوں کو بھی شرکت کی دعوت دوں گی اس کے بعد میں مسز ٹیٹرس کہلوانا پسند کروں گی۔

دوسری جانب نورالماہ جبین حسن کے اہلِ خانہ اس عمل سے بہت پریشان ہیں اور ماہ جبین انہیں سمجھانے کی کوشش کررہی ہیں۔ ان کا دعویٰ ہے کہ آن لائن بہت سے دوست ان کے اس عمل کی تائید کررہے ہیں۔



ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔