جلسوں کوعوامی عدالت قرار دے کرعدلیہ پر تنقید کی جا رہی ہے، عمران خان

ویب ڈیسک  ہفتہ 17 فروری 2018
شریفوں کی منطق ہے کہ جو ووٹ لیکر آجائے وہ قانون سے بالاتر قرار دے دیا جائے۔ عمران خان فائل فوٹو

شریفوں کی منطق ہے کہ جو ووٹ لیکر آجائے وہ قانون سے بالاتر قرار دے دیا جائے۔ عمران خان فائل فوٹو

 اسلام آباد: چیئرمین پاکستان تحریک انصاف عمران خان نے کہا ہے کہ عدالتی فیصلوں پر تنقید کرنے والے قوم و ملک کی خدمت نہیں کررہے بلکہ اداروں کو کمزور کرنے کا باعث بن رہے ہیں۔

پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے اپنی ٹوئٹ میں کہا ہے کہ عوامی عدالت سے رجوع کرنے کی آڑ میں عوام کو بیوقوف بنانے کے لیے شریف باپ اور بیٹی کی جانب سے ریلی کے نام پر رچایا جانے والا تماشا اب بند ہونا چاہیے۔

عمران خان نے کہا کہ ہر کوئی جانتا ہے کہ دنیا بھر کے جمہوری ممالک میں عوام ووٹ کے ذریعے اپنے نمائندے منتخب کرتے ہیں مگر انصاف کی فراہمی عدلیہ ہی کی ذمے داری ہے اسی طرح ریاستی ادارے کرپشن کا کھوج لگانے اور کرپشن کو بے نقاب کرنے کے پابند ہیں جب کہ شریف خاندان کی منطق ہے کہ جو ایک مرتبہ ووٹ لے کر آجائے وہ قانون سے بالاتر اور ہر قسم کی باز پرس سے مبرا قرار دے دیا جائے۔

چیئرمین تحریک انصاف نے مزید کہا کہ عدلیہ اور عدالتی فیصلوں پر تنقید کرنے والوں کو جنوبی افریقہ کی طرف دیکھنا چاہئیے جہاں افریقن نیشنل کانگرس نے کرپشن کے الزامات پر اپنے لیڈر زوما کو گھر بھیج دیا جب کہ اسرائیلی وزیراعظم نتن یاہو کو بھی کرپشن کے الزامات پر پولیس کی تفتیش کا سامنا ہے جس سے ثابت ہوتا ہے کہ کسی کا ووٹ لیکر منتخب ہونا اُسے قانون سے بالاتر نہیں بنا دیتا۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔