مشرف نے آئین توڑا، الیکشن نہ لڑنے دیا جائے، مولانا عبدالعزیز

آن لائن  پير 1 اپريل 2013
سزا نہ دی گئی تو مجرموں کے حوصلے بلند ہونگے، خطیب لال مسجد کی خصوصی گفتگو. فوٹو : اے ایف پی

سزا نہ دی گئی تو مجرموں کے حوصلے بلند ہونگے، خطیب لال مسجد کی خصوصی گفتگو. فوٹو : اے ایف پی

اسلام آباد: لال مسجد کے خطیب مولانا عبد العزیز نے کہا ہے کہ جنرل (ریٹائرڈ) پرویز مشرف کے خلاف کئی اہم مقدمات زیر التوا ہونے کے علاوہ وہ بار بار آئین توڑنے کے مرتکب ہوئے ہیں۔

اس لیے الیکشن کمیشن آف پاکستان پرویز مشرف کو الیکشن لڑنے کی اجازت نہ دے۔ ای سی ایل میں نام ڈالے جانے یہ نہ ڈالنے سے کوئی فرق نہیں پڑتا، پرویز مشرف کو جیل کی سلاخوں کے پیچھے ہونا چاہیے ۔ اگر سابق صدر کو سزا نہ دی گئی تو بڑے مجرموں کے حوصلے مزید بلند ہو جائیں گے۔  اتوار کو آن لائن سے خصوصی گفتگو میں مولانا عبدالعزیز نے کہا کہ سندھ ہائی کورٹ کی جانب سے پرویز مشرف پر ملک سے باہر جانے کی پابندی کا عدالتی فیصلہ خوش آئندہے مگر صرف ای سی ایل میں نام ڈالنے سے کام نہیں چلے گا۔

11

 

مولانا عبدالعزیز کا کہنا تھا کہ پرویز مشرف کے خلاف لال مسجد آپریشن، بے نظیر بھٹو قتل کیس و اکبر بگٹی قتل کیس جیسے مقدمات جب زیر التوا ہیں تو وہ کس طرح صادق اور امین ہو سکتا ہے۔ پرویز مشرف آئین کے آرٹیکل 62اور 63 پر پورا نہیں اترتا، اس لیے الیکشن کمیشن انھیں نا اہل قرار دے۔

انھوں نے کہا کہ مشرف نے نہ صرف ملک میں ظلم ستم کی انتہا کی بلکہ قوم کو اعتماد میں لیے بغیر افغانستان کے خلاف جنگ میں پاکستان کو امریکا کا اتحادی بنایا اور اس کے علاوہ اپنی فوج کو اپنے ہی عوام کے خلاف استعمال کرکے ظلم و ستم کی انتہاکی۔انھوں نے کہا کہ عدلیہ بے بس ہے کیونکہ5 سال کے دوران چیف جسٹس کسی بھی بڑے مجرم کو نہیں پکڑسکے لیکن پھر بھی چیف جسٹس سے اپیل ہے کہ وہ پرویز مشرف کو کڑی سے کڑی سزا دیں۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔