چوہدری نثارسمیت 22 سابق ارکان پارلیمنٹ کی ڈگریاں درست قرار، منظور وٹو کی اسناد مشکوک

ویب ڈیسک  بدھ 3 اپريل 2013
چوہدری نثار علی کی ڈگریوں کی تصدیق ہوگئی ہے جبکہ منظور وٹو کی ڈگریاں مشکوک قرار دے دی گئیں ہیں، فوٹو: فائل

چوہدری نثار علی کی ڈگریوں کی تصدیق ہوگئی ہے جبکہ منظور وٹو کی ڈگریاں مشکوک قرار دے دی گئیں ہیں، فوٹو: فائل

اسلام آباد: ہائر ایجوکیشن کمیشن نے چوہدری نثار علی خان سمیت 22 سابق ارکان پارلیمنٹ کی ڈگریاں درست قرار دے دیں تاہم پیپلز پارٹی کے رہنما منظور وٹو کی ڈگریوں کو مشکوک قرار دے دیا گیا ہے۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق انٹر بورڈ اور کیمبرج یونیورسٹی نے مسلم لیگ (ن) کے رہنما چوہدری نثار کی اسناد درست قرار دینے کا خط جاری کردیا ہے۔ چوہدری نثار علی خان کے علاوہ صمصام بخاری، طاہرہ اورنگزیب، نرگس فیض ملک، افراسیاب خٹک اور محمود حیات خان سمیت22 سابق پارلیمنٹیرینز کی ڈگریاں درست قرار دے دی گئی ہیں۔

دوسری جانب ہائر ایجوکیشن کمیشن نے پیپلز پارٹی وسطی پنجاب کے صدر میاں منظور احمد وٹو کی میٹرک اور انٹر میڈیٹ کی ڈگریوں کو مشکوک قرار دے دیا ہے ، کمیشن کے مطابق منظور وٹو کی دونوں ڈگریوں میں ان کی تاریخ پیدائش مختلف ہے۔

واضح رہے کہ ہائر ایجوکیشن کمیشن  نے سپریم کورٹ کے حکم پر ملک کی تمام جامعات کو 4 اپریل تک ڈگریوں کی تصدیق سے متعلق معلومات فراہم کرنے کی ہدایت کی ہے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔