بلدیہ عظمیٰ: کنٹریکٹ پر تعینات21 افسران کو فارغ کردیا گیا

اسٹاف رپورٹر  جمعرات 4 اپريل 2013
الطاف جی میمن سمیت5ڈائریکٹرز کو فارغ کرنے کے احکامات جاری نہیں ہوئے. فوٹو: آن لائن

الطاف جی میمن سمیت5ڈائریکٹرز کو فارغ کرنے کے احکامات جاری نہیں ہوئے. فوٹو: آن لائن

کراچی:  سپریم کورٹ کے احکامات پر عملدرآمد کرتے ہوئے بلدیہ عظمیٰ کی انتظامیہ نے ادارے میں کنٹریکٹ پر کام کرنیوالے21افسران کو فارغ کردیا ہے۔
تاہم کنٹریکٹ پر کام کرنے والے ڈائریکٹر جنرل ٹیکنیکل سروسز الطاف جی میمن سیت دیگر پانچ کنٹریکٹ ڈائریکٹرز کے فارغ کرنے کے احکامات جاری نہیں کیے گئے ہیں۔

توقع ہے کہ الطاف جی میمن کی برطرفی کے احکامات آئندہ چند روز میں جاری کردیے جائیں گے، بلدیہ عظمیٰ کی طرف سے جاری کردہ اخباری اعلامیے کے مطابق فارغ کیے جانیوالے افسران میں محمد ذاکرڈپٹی میئر سیکریٹریٹ، عتیق بیگ فارن کوآرڈینیشن ڈیسک ایڈمنسٹریٹر سیکریٹریٹ، اقبال جنگ ایڈمنسٹریٹر سیکریٹریٹ، حسن امام صدیقی ڈپٹی میئر سیکریٹریٹ، شمیم خان محکمہ انجینئرنگ،

سید واحد علی ایڈمنسٹریٹر سیکریٹریٹ، عبدالستار جاوید محکمہ ٹرانسپورٹ اینڈ کمیونیکیشن، خالد جاوید محکمہ انجینئرنگ ، سید فرحت حسین زیدی محکمہ ایچ آر ایم، تھاور علی خان محکمہ قانون، جہاں داد خان محکمہ انجینئرنگ ،

سلمان اختر فریدی لیاری ایکسپریس وے ری ہیبلی ٹیشن پروجیکٹ ، خورشید جاوید محکمہ قانون، نادم خان محکمہ قانون، رانی ورثہ محکمہ تعلیم، انوار الحق محکمہ قانون، محمد سلیم ابراہیم محکمہ اسٹور، غلام رسول کراچی ماس ٹرانزٹ سیل، اے رشید مغل کراچی ماس ٹرانزٹ سیل، خورشید انوار محکمہ میڈیکل سروس، غوث محمد محکمہ انٹرنل آڈٹ، محمد بشیر محکمہ میڈیکل سروس، اقبال احمد خان محکمہ انجینئرنگ، پرویز افضل محکمہ انٹرنل آڈٹ اور عبدالواسع محکمہ انجینئرنگ شامل ہیں،محکمہ ہیومن ریسورس کی جانب سے جاری کیے گئے ایک حکم نامے میں تمام محکموں کے سربراہان کو ہدایت کی گئی ہے کہ فارغ کیے گئے تمام افراد کو دی جانیوالی تمام مراعات بشمول سرکاری گاڑیوں کو فوری طور پر واپس لے لیا جائے اور ان احکامات پر عملدرآمد کرتے ہوئے محکمہ کو فوری طور پر رپورٹ پیش کی جائے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔