سعودی عرب میں بچوں کے سامنے تمباکو نوشی جرم قرار

خبر ایجنسیاں  منگل 13 مارچ 2018
قوانین کی خلاف ورزی کرنے والے کو کوڑے اور جیل کی سزا دی جا سکتی ہے۔ فوٹو: سوشل میڈیا

قوانین کی خلاف ورزی کرنے والے کو کوڑے اور جیل کی سزا دی جا سکتی ہے۔ فوٹو: سوشل میڈیا

جدہ:  سعودی پبلک پراسیکیوشن کے ادارے نے سگریٹ نوشی کے حوالے سے قوانین وضع کرتے ہوئے کہا ہے کہ کم عمر بچوں کو سگریٹ خریدنے کیلیے بھیجنا، انہیں تمباکو نوشی کی ترغیب دینا صور کیا جائے گا۔

سعودی اخبار کے مطابق گزشتہ ہفتے سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی وہ وڈیو جس میں ایک شخص اپنی کمسن بیٹی کو زبردستی سگریٹ پلا رہا تھا۔ وڈیو وائرل ہونے کے بعد پبلک پراسیکیوشن نے مذکورہ شخص کی گرفتاری کے احکام جاری کرتے ہوئے اس کے عمل کو بچوں کے خلاف قرار دیا۔

حکام کے مطابق جو لوگ کم عمر بچوں کے ساتھ بیٹھ کر تمباکو نوشی کریں گے یا انہیں سگریٹ نوشی کی ترغیب دیں ان کا یہ عمل قانون شکنی کے دائرے میں آئے گا جس پر باقاعدہ مقدمہ چلایا جاسکتا ہے۔



ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔