نیب ریفرنس کی سماعت؛ نواز شریف کے بینک اکاوٴنٹ کی تفصیلات پیش

ویب ڈیسک  بدھ 14 مارچ 2018
 العزیزیہ ریفرنس میں استغاثہ کی گواہ نورین شہزادی کا بیان ریکارڈ فوٹو: فائل

 العزیزیہ ریفرنس میں استغاثہ کی گواہ نورین شہزادی کا بیان ریکارڈ فوٹو: فائل

 اسلام آباد: شریف خاندان کے خلاف نیب کے العزیزیہ ریفرنس کی سماعت کے دوران استغاثہ کی گواہ نورین شہزادی نے نوازشریف اور ان کے بیٹے حسین نواز کے بینک اکاؤنٹس کی تفصیلات پیش کردیں۔

ایکسپریس نیوزکے مطابق اسلام آباد میں احتساب عدالت کے جج محمد بشیرنے شریف خاندان کے خلاف نیب ریفرنسزکی سماعت کی، سماعت کے دوران العزیزیہ ریفرنس میں استغاثہ کی گواہ نورین شہزادی کا بیان ریکارڈ کیا گیا۔

بیان ریکارڈ کرانے کے دوران نورین شہزادی نے نواز شریف کے بیٹے حسین نواز کے اکاوٴنٹ کی تفصیلات پیش کیں، نوازشریف کے وکیل خواجہ حارث نے گواہ کی دستاویزات پر اعتراض اٹھا دیا۔

سماعت کے دوران گواہ نے نواز شریف کے بینک اکاؤنٹ کی تفصیلات بھی پیش کردیں، گواہ نے بتایا کہ  نواز شریف کا اکاوٴنٹ اگست 2009 میں کھولا گیا، اکاوٴنٹ کھولنے کے فارم میں نواز شریف کو چوہدری شوگر ملز کا سی ای او لکھا گیا ہے اوراکاؤنٹ کھولنے کا مقصد کاروبار سے ہونے والی بچت کو رکھنا ہے.

نواز شریف نے ریکارڈ پراعتراض اٹھایا کہ اوپننگ فارم اورکے وائی سی میں اکاوٴنٹ ٹائپ میں تضاد ہے، اوپننگ فارم میں اکاوٴنٹ ٹائپ کے خانے میں کرنٹ اکاوٴنٹ پر نشان لگایا گیا، جس پر گواہ نورین شہزادی نے بتایا کہ صارفین کے اصرار پر کے وائی سی (فارم) میں سیونگ لکھا جاتا ہے۔



ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔