رائے ونڈ میں پولیس چیک پوسٹ کے قریب خود کش حملہ، 5 اہلکاروں سمیت 9 افراد شہید

ویب ڈیسک  بدھ 14 مارچ 2018
خدشہ ہے خودکش بمبار دھماکے کی جگہ پر پہلے سے موجود تھا- فوٹو: سوشل میڈیا

خدشہ ہے خودکش بمبار دھماکے کی جگہ پر پہلے سے موجود تھا- فوٹو: سوشل میڈیا

لاہور میں رائے ونڈ اجتماع گاہ کے باہر پولیس کیمپ کے قریب خود کش حملے میں 5 اہلکاروں سمیت 9 افراد شہید ہوگئے۔ 

ایکسپریس نیوز کے مطابق لاہور میں رائے ونڈ اجتماع گاہ کے باہر پولیس کیمپ کے قریب خود کش دھماکہ ہوا جس کے نتیجے میں 5 پولیس اہلکاروں سمیت 9 افراد شہید ہوئے۔

پولیس کے مطابق دھماکے میں اے ایس پی اور ایس ایچ او رائے ونڈ سمیت 19 افراد زخمی ہوئے جنہیں جناح اسپتال، شریف میڈیکل سٹی اور ٹی ایچ کیو رائے ونڈ منتقل کیا گیا۔ دھماکے کے بعد ریسکیو ٹیمیں جائے وقوعہ پر پہنچی جب کہ سیکیورٹی فورسز نے علاقے کو گھیرے میں لے لیا۔

دھماکا پولیس نفری کی تبدیلی کے دوران ہوا

ڈی آئی جی آپریشنز حیدر اشرف نے کہا کہ دھماکے میں پولیس کو نشانہ بنایا گیا ہے جب کہ دھماکا پولیس نفری کی تبدیلی کے دوران ہوا، پولیس نے ایک بار پھر اپنے خون سے ایک بڑے واقعہ سے بچالیا اور قربانی دے کر دہشت گرد کو بڑے اجتماع میں نہیں پہنچنے دیا۔

خودکش بمبار دھماکے کی جگہ پر پہلے سے موجود تھا

حیدر اشرف کا کہنا تھا کہ ابتدائی تحقیقات کے مطابق دھماکا خود کش تھا، بمبار کے کچھ اعضا مل گئے ہیں، خدشہ ہے خودکش بمبار دھماکے کی جگہ پر پہلے سے موجود تھا جب کہ دھماکے میں 5 پولیس اہلکار سمیت 9 افراد شہید ہوئے اور 11 پولیس اہلکاروں سمیت 19 افراد زخمی بھی ہوئے لیکن ان تمام شہادتوں کے باجود پولیس فورس کھڑی ہے اور کھڑی رہے گی۔ انہوں نے کہا کہ پی ایس ایل کا سیکیورٹی پلان از سر نو ترتیب دیا جائے گا۔

پنجاب بھر میں سیکیورٹی ہائی الرٹ

دوسری جانب دھماکے کے بعد آئی جی پنجاب کیپٹن (ر) عارف نواز خان نے صوبے میں سیکیورٹی ہائی الرٹ کرنے کے احکامات جاری کر دیے۔

وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر ٹوئٹ کرتے ہوئے دھماکے میں شہید ہونے والے اہلکاروں کے اہلخانہ سے تعزیت کرتے ہوئے لکھا کہ بہادر پولیس اہلکاروں نے فرائض کی انجام دہی کے دوران اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کیا، قوم کو دہشت گردی کے خلاف جنگ میں قربانی دینے والے شہریوں، پنجاب پولیس اور سیکیورٹی اہلکاروں پر فخر ہے۔



ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔