غیر قانونی بولنگ ایکشن؛ معین خان نے سنیل نارائن کو ’’چکر‘‘ قرار دے دیا

سلیم خالق  جمعـء 16 مارچ 2018
آئندہ پی ایس ایل ڈرافٹ سے قبل غیرملکی کرکٹرزکوپاکستان میں کھیلنے کا پابند کیا جائے،کوچ کوئٹہ گلیڈی ایٹرز۔ فوٹو: فائل

آئندہ پی ایس ایل ڈرافٹ سے قبل غیرملکی کرکٹرزکوپاکستان میں کھیلنے کا پابند کیا جائے،کوچ کوئٹہ گلیڈی ایٹرز۔ فوٹو: فائل

 کراچی:  کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے کوچ معین خان نے لاہور قلندرز کے اسپنر سنیل نارائن کو ’’چکر‘‘ قرار دیدیا۔

بدھ کو لاہور قلندرز کی نمائندگی کرتے ہوئے سنیل نارائن نے کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کیخلاف22 رنز دیکر2 وکٹیں حاصل کیں، انھوں نے روئے اور کیون پیٹرسن کو شکار کر کے اپنی ٹیم کی فتح میں اہم کردار ادا کیا، کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے کوچ معین خان نے اب سنیل نارائن کے بولنگ ایکشن پر سوال اٹھا دیا ہے۔

نمائندہ ’’ایکسپریس‘‘ سے گفتگو کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ ویسٹ انڈین کرکٹر واضح طور پر چکنگ کر رہے ہیں تاہم حیران کن طور پر امپائرز نے ان کے ایکشن کی رپورٹ نہیں کی، پی ایس ایل میں اعلیٰ معیار کی کرکٹ ہو رہی ہے ایسے میں اتنی اہم بات کو نظرانداز کرنا درست نہیں۔

معین خان نے کہا کہ مشکوک ایکشن کے حوالے سے دہرا معیار رائج ہے، دنیا نے ہمارے سعید اجمل کے ایکشن کو غیرقانونی قرار دیکر قبل از وقت کیریئر ختم کرا دیا، حفیظ اپنے ملکی ایونٹ میں بولنگ نہیں کر رہے لیکن پی ایس ایل میں کسی امپائر میں جرات نہیں کہ سنیل نارائن کے خراب ایکشن کی رپورٹ کرے، وہ اب تک9 میچز کھیل چکے۔

معین خان نے کہا کہ ایونٹ کے دوران میرا یہ کہنا شاید کرکٹ حکام کو پسند نہ آئے لیکن میں ہمیشہ کرکٹ کی بہتری کیلیے ہی بات کرتا ہوں،میرا کوئی ذاتی مفاد نہیں اور میرے لیے پاکستان کرکٹ و پی ایس ایل زیادہ اہم ہیں، اپنی لیگ کو بہترین بنانے کیلیے ہمیں جراتمندانہ اقدامات سے گریز نہیں کرنا چاہیے۔

واضح رہے کہ سنیل کا ایکشن ماضی میں رپورٹ ہوچکا اور آئی سی سی سے کلیئرنس ملنے کے بعد انھوں نے دوبارہ بولنگ شروع کی تھی۔

سابق قومی کپتان نے مزید کہا کہ آئندہ پی ایس ایل ڈرافٹ سے قبل پی سی بی غیرملکی کھلاڑیوں کو پابند کرے کہ وہ پاکستان جائیں ورنہ معاہدے نہ کیے جائیں، اہم میچز سے قبل اسٹارز کی خدمات سے محروم ہونے سے ٹیموں کا توازن خراب ہو جاتا ہے، البتہ یہ نئے آنیوالے پلیئرز کیلیے بھی اچھا موقع ہوگا کہ وہ اپنی صلاحیتوں کا اظہار کریں۔

ایک سوال پر معین خان نے کہا کہ اب تک باضابطہ طور پر کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے کسی کھلاڑی نے پاکستان جانے سے انکار نہیں کیا مگر چہ مگوئیاں جاری ہیں، دیکھتے ہیں کیا ہوتا ہے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔