55 سالہ فرنچ اسپائیڈرمین نے 614 فٹ اونچی عمارت ایک گھنٹے میں سر کرلی

ویب ڈیسک  ہفتہ 17 مارچ 2018
ایلن رابرٹ اس سے قبل برج الخلیفہ اور ایفل ٹاور سمیت کئی عمارتوں کو سر کرچکے ہیں، فوٹو: ڈیلی میل

ایلن رابرٹ اس سے قبل برج الخلیفہ اور ایفل ٹاور سمیت کئی عمارتوں کو سر کرچکے ہیں، فوٹو: ڈیلی میل

پیرس: فرانسیسی اسپائیڈر مین کے نام سے شہرت حاصل کرنے والے 55 سالہ شخص نے 48 منزلہ عمارت کو صرف 1 گھنٹے میں سر کرلیا۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق ‘فرنچ اسپائیڈر مین’ کے نام سے شہرت رکھنے والے 55 سالہ ایلن رابرٹ نے فرانس کی چوتھی بڑی اونچی عمارت ’ ٹوٹل بلڈنگ‘ کو صرف ایک گھنٹے کے اندر عبور کر کے سب کو حیران کردیا۔

ایلن رابرٹ نے 187 میٹر اونچی اس عمارت کو محض ایک مخصوص جوتے اور چاک کی مدد سے سر کیا۔ سیکڑوں افراد نے یہ منظر دیکھا اور  وائرل ہونے والی ویڈیو اور تصاویر نے انٹرنیٹ پر ہلچل مچادی۔

spiderman

ایلن رابرٹ 11 برس کی عمر سے بلند عمارتوں کو سر کرنے کی مہم کے دلدادہ ہیں اور 55 سال کی عمر میں بھی اُن کی ہمت اور جواں مردی میں کمی واقع نہیں ہوئی۔ ایلن رابرٹ اس سے قبل دبئی، پیرس اور دیگر ممالک کی بھی کئی اونچی عمارتوں پر چڑھنے کی مہارت دکھا چکے ہیں جن میں دنیا کی بلند ترین عمارت برج خلیفہ، ایفل ٹاور، سڈنی اوپیرا ہاؤس بھی شامل ہیں۔

واضح رہے کہ ایلن رابرٹ کو عمارتوں پر چڑھنے کے لیے خطرہ مول لینے اور سرکاری اجازت نامہ حاصل نہ کرنے پر پولیس کی جانب سے گرفتار کیا جا چکا ہے تاہم یہ گرفتاریاں بھی ان کے شوق کی راہ میں رکاوٹ نہیں بن سکیں۔

ایلن رابرٹ کا کہنا ہے کہ جب تک خود کو فٹ محسوس کرتا ہوں عمارتیں سر کرتا رہوں گا یہ میرا شوق ہی نہیں جنون بھی ہے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔