منگھوپیر میں کچرا کنڈی کے قریب سے لڑکی کی لاش ملی

اسٹاف رپورٹر  منگل 17 اپريل 2018
اورنگی ٹاؤن میں بڑے بھائی نے بھائی اور بھابھی کو تیز دھار آلے کے وار سے زخمی کردیا۔فوٹو:فائل

اورنگی ٹاؤن میں بڑے بھائی نے بھائی اور بھابھی کو تیز دھار آلے کے وار سے زخمی کردیا۔فوٹو:فائل

 کراچی: منگھوپیر کے علاقے ناردرن بائی پاس کے قریب سے کچرا کنڈی سے کمسن لڑکی کی تشدد زدہ لاش ملی جو 24 گھنٹے سے زائد پرانی بتائی جاتی ہے۔

منگھوپیر کے علاقے ناردرن بائی پاس کچا روڈ کے قریب کچرا کنڈی سے 7 سالہ لڑکی کی تشدد زدہ لاش ملی جس کی اطلاع ملتے ہی پولیس نے موقع پر پہنچ کر لاش ضابطے کی کارروائی کے لیے ایدھی ایمبولینس کے ذریعے عباسی شہید اسپتال پہنچائی۔

ایس ایچ او منگھوپیر حاجی ثنا اللہ نے بتایا کہ لڑکی کی لاش تقریباً 24 گھنٹے سے زائد پرانی ہے جبکہ اسے تشدد کا نشانہ بنانے کے بعد گلا گھونٹ کر قتل کیا گیا ، انھوں نے بتایا کہ فوری طور پر لڑکی کی شناخت نہیں ہو سکی تاہم لیڈی ایم ایل او نے پوسٹ مارٹم کے لیے اجزا محفوظ کر لیے ہیں اور میڈیکل رپورٹ آنے کے بعد ہی قتل کی وجہ اور بچی کے ساتھ زیادتی سے متعلق درست معلومات ہو سکے گی تاہم ابتدائی طور پر شبہ ہے کہ بچی کو زیادتی کا بھی نشانہ بنایا گیا ہے۔

مومن آباد اورنگی ٹاؤن سیکٹر 10 فقیر کالونی میں گھریلو جھگڑے کے دوران تیز دھار آلے کے سار لگنے سے خاتون سمیت 2 افراد زخمی ہوگئے جنھیں فوری طبی امداد کے لیے قریبی اسپتال لیجایا گیا۔

اس حوالے سے ایس ایچ او شعیب قریشی نے بتایا کہ ملزم ثنا اللہ عرف سنی نے گھریلو جھگڑے کے دوران اپنے چھوٹے بھائی 28 سالہ امجد اور اس کی اہلیہ 25 سالہ زینب کو تیز دھار آلے کے وار سے زخمی کر دیا جس کی اطلاع ملتے ہی پولیس نے موقع پر پہنچ کر ملزم کو گرفتار کر کے خون آلود تیز دھار آلہ برآمد کرلیا۔

شعیب قریشی نے بتایا کہ زخمی ہونے والے میاں بیوی کی حالت خطرے سے باہر ہے جبکہ ملزم بھائی اور بھابھی کو زخمی کرنے کے حوالے سے متضاد بیانات دے رہا ہے تاہم پولیس مزید تحقیقات کر رہی ہے۔



ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔