سپریم کورٹ نے 3 نومبر2007 کا اقدام غیرآئینی قرار دیا تھا، چیف جسٹس

ویب ڈیسک  جمعـء 19 اپريل 2013
عدلیہ ہی قانون کی عملداری یقینی بناسکتی ہے اور ایسی ریاستیں جہاں امن اور انصاف نہ ہو وہ قائم نہیں رہ سکتیں، چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری  فوٹو: فائل

عدلیہ ہی قانون کی عملداری یقینی بناسکتی ہے اور ایسی ریاستیں جہاں امن اور انصاف نہ ہو وہ قائم نہیں رہ سکتیں، چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری فوٹو: فائل

اسلام آباد: چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری نے کہا ہے کہ عدلیہ نے 3 نومبر2007 کو پرویز مشرف کی جانب سے لگائی گئی ایمرجنسی کو غیر آئینی قرار دیا تھا۔

اسلام آباد میں 3 روزہ جوڈیشل کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے چیف جسٹس آف پاکستان افتخار محمد چوہدری نے کہا کہ تمام طبقات کو انصاف فراہم کرنا عدلیہ کی ذمہ داری ہے اور عوامی مفادات کو مدنظر رکھتے ہوئے ازخود نوٹس لیا جاتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ آزاد عدلیہ ہی قانون کی عملداری یقینی بناسکتی ہے، امن اور انصاف کے بغیر کسی ریاست کا تصور بھی ممکن نہیں اور ایسی ریاستیں جہاں امن اور انصاف نہ ہو وہ قائم نہیں رہ سکتیں۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔