’سوشل میڈیا وار‘ راحت فتح علی خان نے بھارتیوں کو پیچھے چھوڑ دیا

قیصر افتخار  جمعـء 18 مئ 2018
بھارتی میوزک کمپنیاں اورموسیقی سے جڑے حلقے پریشان دکھائی دینے لگے۔ فوٹو: فائل

بھارتی میوزک کمپنیاں اورموسیقی سے جڑے حلقے پریشان دکھائی دینے لگے۔ فوٹو: فائل

 لاہور:  بین الاقوامی شہرت یافتہ گلوکاراستاد راحت فتح علی خاں کی مینجمنٹ کی شاندارپالیسی کے باعث بھارت کے صف اول کے گلوکار ’سوشل میڈیا وار‘ میں مقابلے کے قابل نہ رہے۔

راحت فتح علی خاں کے بزنس ڈائریکٹراور پروڈیوسرسلمان احمد نے سوشل میڈیا کی اہمیت کومدنظررکھتے ہوئے کچھ عرصہ قبل یوٹیوب پرایک چینل لانچ کیا تھا ، جس کے ذریعے دنیا بھرمیں لوگوں کی بڑی تعداد نے راحت کے گیت سُنے اورانھیں پسند کیا۔

ایک طرف توفلمی گیت تھے اوردوسری جانب قوالیوں کے علاوہ آڈیوالبم ’بیک ٹو لو‘کے گیت ’ضروری تھا ‘شامل ہے۔ اس گیت کو دنیا بھر کے 386ملین لوگوں نے دیکھا اورابھی بھی یہ سلسلہ جاری ہے۔

اس کے علاوہ گزشتہ کچھ عرصہ کے دوران ہی راحت فتح علی خاں کے چینل کودیکھنے والوں کی تعداد لاکھوں سے تجاوز کرگئی ہے جبکہ ان کے مقابلے میں بھارت کے معروف گلوکاروں اور موسیقاروں کو بڑے مارجن سے مات ملی ہے۔

معلوم ہوا ہے کہ راحت فتح علی خاں کے چینل کودیکھنے والوں کی بڑی تعداد کا تعلق بھارت اورپاکستان سے ہے لیکن لاکھوں کی تعداد میں دنیا بھرمیں بسنے والے لوگ بھی اس کا حصہ ہیں، جس کی بدولت آج بالی وڈ اوربھارتی میوزک انڈسٹری پر’’ راج ‘‘ کرنے والے گلوکار اور موسیقار مقبولیت کی ریس میں بہت پیچھے رہ گئے ہیں۔



ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔