ٹرمپ کے دباؤ پر برطانیہ کا مزید فوجی افغانستان بھیجنے کا وعدہ

ویب ڈیسک  بدھ 11 جولائ 2018
اضافی فوجی نیٹو میشن میں معاونت کریں گے، فوٹو: فائل

اضافی فوجی نیٹو میشن میں معاونت کریں گے، فوٹو: فائل

 لندن: امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے دباؤ پر برطانیہ نے مزید فوجی افغانستان بھیجنے کا وعدہ کیا ہے۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے برطانیہ سمیت یورپی ممالک پر اضافی نفری بھیجنے کے دباؤ پر برطانوی وزیراعظم تھریسامے نے 440 اضافی فوجی افغانستان بھیجنے کی یقین دہانی کرائی ہے۔

ڈونلڈ ٹرمپ نے یورپی ممالک اور اپنے اتحادیوں پرزور دیا تھا کہ اپنے دفاع کے لیے عسکری قوت میں اضافہ کرکے نیٹو میشن میں معاونت کے لیے مزید فوجی بھیجیں۔

یہ بھی پڑھیں: افغانستان میں نیٹو ہیلی کاپٹر تباہ، 2 برطانوی فوجیوں سمیت 5 اہلکار ہلاک

برطانوی وزیراعظم کا کہنا ہے کہ اضافی فوجی دستہ ویلش گارڈز سے لیا جائے گا جو کہ کابل میں تعینات نیٹو اہلکاروں کی نہ صرف حفاظت کرے گا بلکہ صلاحیت بڑھانے کے پروگراموں میں بھی معاونت کرے گا، اس کے ساتھ ساتھ یہ نئی کمک افغان سیکورٹی فورسز کی دشمنوں کے خلاف لڑنے کی صلاحیتوں کو بھی مانیٹر کرے گی۔

واضح رہے کہ اس وقت افغانستان میں تعینات برطانوی فوجیوں کی تعداد 1100 ہے جو زمینی کارروائیوں کے ساتھ ساتھ دیگر عسکری کارروائیوں میں نیٹومشن کی معاونت کررہے ہیں۔



ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔