خبردار! برونڈی میں جاگنگ کرنے پر آپ کو عمرقید کی سزا ملے گی

 جمعـء 13 جولائ 2018
حکومت بچانے کےلیے برونڈی کے صدر نے ملک بھر میں جتھوں کی شکل میں جاگنگ پر مکمل پابندی لگا دی ہے۔ (فوٹو: فائل)

حکومت بچانے کےلیے برونڈی کے صدر نے ملک بھر میں جتھوں کی شکل میں جاگنگ پر مکمل پابندی لگا دی ہے۔ (فوٹو: فائل)

چہل قدمی کرنا اور دوڑنا اگرچہ ہماری صحت کےلیے بہت مفید ہے لیکن اگر آپ افریقہ کے ملک برونڈی میں ہیں تو ہوشیار رہیے گا کیونکہ وہاں لوگوں کو ایک ساتھ جاگنگ کرنے پر عمر قید کی سزا بھی دی جاسکتی ہے۔ 

برونڈی کے عوام میں ہفتے کے روز جاگنگ کی روایت صدیوں سے چلی آرہی ہے لیکن پچھلے چند برسوں سے اس پر سخت پابندی عائد ہے کیونکہ برونڈی کے صدر پائیر انکورونزیزا کو خطرہ ہے کہ حزب اختلاف کی جماعتیں اسی روایت کو استعمال کرتے ہوئے حکومت کا تختہ بھی پلٹ سکتی ہیں۔ اسی خدشے کے تدارک کےلیے انکورونزیزا کے حکم پر برونڈی میں یہ میں قانون نافذ کیا گیا ہے کہ لوگ جتھوں کی شکل میں ہفتے کی روایتی چہل قدمی/ جاگنگ نہیں کریں گے؛ اور اگر کوئی ایسا کرتا ہوا پایا گیا تو اسے اپنی زندگی کے باقی روز و شب قید خانے میں بسر کرنا پڑیں گے۔

واضح رہے کہ برونڈی کئی برسوں سے خانہ جنگی کا شکار رہا ہے جہاں وقفے وقفے سے حکومت کے خلاف بغاوت ہوتی رہتی ہے۔ انکورونزیزا نے اگست 2005 میں برونڈی کا اقتدار حاصل کیا تھا اور تب سے اب تک وہاں کے حالات ابتر ہیں۔ مسلسل خانہ جنگی کے باعث برونڈی، افغانستان کے بعد دنیا کا دوسرا ملک ہے جہاں کے بچے سب سے زیادہ غذائی قلت کا شکار ہیں۔



ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔