منی لانڈنگ کیس؛ حسین لوائی کوعدالتی ریمانڈ پر جیل بھیج دیا گیا

ویب ڈیسک  ہفتہ 14 جولائ 2018
حسین لوائی کی جانب سے بی کلاس کی درخواست دائر کردی گئی فوٹو: فائل

حسین لوائی کی جانب سے بی کلاس کی درخواست دائر کردی گئی فوٹو: فائل

کراچی: عدالت نے اربوں روپے کی منی لانڈرنگ سے متعلق کیس میں آصف زرداری کے قریبی دوست حسین لوائی کو ریمانڈ پر جیل بھجوادیا ہے۔

جوڈیشل مجسٹریٹ جنوبی کراچی کی عدالت میں نجی بینک منی لانڈرنگ کیس کی سماعت ہوئی، ایف آئی اے نے نجی بینک کےسربراہ حسین لوائی اورطہٰ رضا کوعدالت میں پیش کیا۔ تفتیشی افسر نے موقف اختیار کیا کہ اربوں روپے کی منی لانڈرنگ کے لیے  47 اکاؤنٹس استعمال کئے گئے بینیفشریزاور دیگر معاملات کی تحقیقات کے لیے مزید جسمانی ریمانڈ درکارہے۔ اس لئے ان کے جسمانی ریمانڈ میں مزید توسیع کی اجازت دی جائے۔ جب کہ ملزمان کے وکلا نے اپنے موکلین کو جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیجنے کی درخواست کی۔

اس خبرکوبھی پڑھیں: حسین لوائی ایف آئی اے کے حوالے

عدالت نے ایف آئی اے کی جانب سے ریمانڈ میں مزید توسیع کی درخواست مسترد کرتے ہوئے دونوں ملزمان کو 14 روز کے لیے جیل بھجوادیا۔

واضح رہے کہ حسین لوائی اور طہٰ رضا پر اربوں روپے کی منی لانڈرنگ کا الزام ہے۔ حسین لوائی پاکستان اسٹاک ایکسچینج کے چیئرمین اور نجی بینک کے سربراہ ہونے کے علاوہ آصف زرداری کے قریبی دوست بھی سمجھے جاتے ہیں۔



ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔