سرکاری ہیلی کاپٹرکا استعمال؛ عمران خان نے نیب کے سامنے پیش ہونے کے لئے وقت مانگ لیا

ویب ڈیسک  بدھ 18 جولائ 2018
عمران خان پر خیبرپختونخوا حکومت کے ہیلی کاپٹرز کو غیرسرکاری دوروں کے لئے استعمال کا الزام ہے فوٹو: فائل

عمران خان پر خیبرپختونخوا حکومت کے ہیلی کاپٹرز کو غیرسرکاری دوروں کے لئے استعمال کا الزام ہے فوٹو: فائل

اسلام آباد: پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے سرکاری ہیلی کاپٹر کے استعمال کے کیس میں نیب کے سامنے پیش ہونے کے لئے وقت مانگ لیا۔

قومی احتساب بیورو (نیب) خیبرپختونخوا نے چیئرمین تحریک انصاف عمران خان کو سرکاری ہیلی کاپٹر کے استعمال کے کیس میں آج طلب کیا تھا تاہم انہوں نے پیش ہونے سے معذرت کرلی ہے۔ عمران خان کے وکیل ڈاکٹر بابر اعوان نے نیب کے مراسلے کا جواب بھجوایا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ عمران خان سیاسی عزائم سے مبرا مکمل طور پر شفاف احتساب کی بھرپور حمایت کرتے ہیں، انہوں نے ہمیشہ نیب کو مضبوط بنانے کی وکالت کی، انتخابات میں کامیاب ہوئے تو اسے مضبوط بنائیں گے۔

نوٹس کے جواب میں کہا گیا ہے کہ انتخابات کی آمد آمد ہے اور عمران خان تحریک انصاف کی انتخابی مہم کی قیادت کررہے ہیں، 18 جولائی کو پہلے سے طے شدہ مصروفیات کے باعث عمران خان کے لئے پیشی مشکل ہے، نیب مناسب سمجھے تو آئندہ سماعت کےلئے سات اگست کی تاریخ مقرر کرلے۔

واضح رہے کہ چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال نے 2 فروری کو عمران خان کی جانب سے خیبرپختونخوا حکومت کے 2 ہیلی کاپٹرز کو غیرسرکاری دوروں کے لئے نہایت ارزاں نرخوں پر استعمال کا نوٹس لیتے ہوئے انکوائری کا حکم دیا تھا۔ نیب کی جانب سے جاری اعلامیے میں کہا گیا تھا کہ عمران خان نے ایم آئی 17 پر 22 گھنٹے اور ایکیوریل ہیلی کاپٹر پر 52 گھنٹے پرواز کی اور اوسطاً 28 ہزار روپے کے حساب سے 74 گھنٹوں کے 21 لاکھ 7 ہزار 181 روپے ادا کیے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔