پی آئی اے طیارہ سیر کے لیے لے جانے کی تحقیقات کا حکم

نمائندہ ایکسپریس  جمعرات 19 جولائ 2018
چیئرمین نیب نے حکم دیا،آسٹریلوی سفارتخانے کی شکایت پرریفرنس دائر۔ فوٹو: فائل

چیئرمین نیب نے حکم دیا،آسٹریلوی سفارتخانے کی شکایت پرریفرنس دائر۔ فوٹو: فائل

 اسلام آباد: قومی ایئرلائن کی پرواز کو سیر کے لیے استعمال کرنے کے معاملے پر چیئرمین نیب جسٹس رٹائرڈ جاوید اقبال نے ڈی جی سول ایوی ایشن اتھارٹی کیخلاف شکایات کی جانچ پڑتال کا حکم دے دیا۔

ذرائع کے مطابق چیئرمین نیب نے کہا کہ ڈی جی سول ایوی ایشن نے مبینہ طورپر پی آئی اے کی اسکردوکی پروازکو فضائی سیرکے لیے استعمال کیاہے۔ مسافروں نے ایئرپورٹ پر ڈھائی گھنٹے غیرضروری انتظارکیا، چیئرمین نیب نے پی آئی اے کا طیارہ بلا اجازت ملک سے باہر لے جانے کی شکایت پررپورٹ طلب کرتے ہوئے کہا بتایا جائے کہ سابق سی ای او طیارہ ملک سے باہرکیسے لیکرگئے۔ نیب ذمے داران کیخلاف قانون کے مطابق کارروائی کرے گا۔

چیئرمین نیب نے کہا پی آئی اے قومی اثاثہ ہے، قومی سرمائے کی حفاظت نیب کی ذمے داری ہے۔ نیب راولپنڈی نے کنسلٹنسی فرم العباس انٹرنیشنل ایجوکیشنل کے مالک اور ڈائریکٹر نذر عباس کیخلاف احتساب عدالت راولپنڈی میں ریفرنس دائرکر دیا۔

پاکستان میں آسٹریلوی ہائی کمشنر نے نیب راولپنڈی کوالعباس انٹرنیشنل ایجوکیشنل کیخلاف مقدمہ بھجوایا تھا،ملزم نے طالب علموں سے دھوکہ دہی سے اسٹڈی ویزے پرآسٹریلیا بھجوانے کاجھانسا دیکرایک کروڑ 42 لاکھ 30ہزار روپے بٹورے۔



ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔