پاکستان طالبان اور حقانی نیٹ ورک کیخلاف موثر اقدام کرے، امریکی کمانڈر

ایکسپریس ٹریبیون / خبر ایجنسیاں  ہفتہ 21 جولائ 2018
افغان پالیسی کاجائزہ لے رہے ہیں مگرکسی اہم تبدیلی کاامکان نہیں،پاک افغان افواج میںانتہائی اچھا وبہترتعاون دیکھاہے،جنرل جوزف ووٹل۔ فوٹو : فائل

افغان پالیسی کاجائزہ لے رہے ہیں مگرکسی اہم تبدیلی کاامکان نہیں،پاک افغان افواج میںانتہائی اچھا وبہترتعاون دیکھاہے،جنرل جوزف ووٹل۔ فوٹو : فائل

 واشنگٹن: امریکی فوج کی سینٹرل کمان (سینٹ کام )کے کمانڈرجنرل جوزف ووٹل نے کہاہے کہ افغانستان میں قیام امن کیلیے پاکستان کاتعاون اہم ہے۔

فلوریڈامیں سینٹرل کمان کے ہیڈکوارٹرزمیں امریکی فوج کی جنوبی ایشیاکے بارے میں حکمت عملی کے بارے میں محکمہ دفاع کی بریفنگ کے دوران جنرل جوزف ووٹل نے کہاکہ افغانستان میں پائیدارسیاسی حل کے مقصد کے حصول کیلیے پاکستان کاتعاون انتہائی اہمیت کاحامل ہے۔

پاکستان سے ڈومور کے مطالبے پرمبنی امریکی انتظامیہ کے موقف کااعادہ کرتے ہوئے انھوں نے کہاکہ ہم اس اہم کردار کو نبھانے میںمدد کیلیے پاکستان کے ساتھ قریبی طورپرمل کرکام کررہے ہیں جس کا عندیہ انھوں نے دیااوراب وقت آگیاہے کہ وہ آگے بڑھیں۔ افغانستان فورسزکی استعداد بہترہورہی ہے تاہم انھیں طالبان اورداعش کے شدت پسندوں کامقابلہ کرنے کیلیے مزیدوقت درکارہے، افغان فورسزلڑرہی ہیں اور جانی نقصان بھی ہورہاہے تاہم ہرگزرتے دن کے ساتھ ان کی صلاحیت اورکارکردگی میں بہتری آرہی ہے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔