جدید ٹیکنالوجی نے میوزک کے شعبہ میں مشینی گلوکار پیدا کیے، رزکمالی

قیصر افتخار  اتوار 29 جولائ 2018
آج کے دور میں ہمارے ملک میں فلمیں توجدید ٹیکنالوجی سے بنائی جارہی ہیں لیکن میوزک کے شعبے پرکچھ خاص توجہ نہیں دی جارہی، اداکارہ۔ فوٹو : فائل

آج کے دور میں ہمارے ملک میں فلمیں توجدید ٹیکنالوجی سے بنائی جارہی ہیں لیکن میوزک کے شعبے پرکچھ خاص توجہ نہیں دی جارہی، اداکارہ۔ فوٹو : فائل

لاہور: اداکارہ وماڈل رزکمالی نے کہا ہے کہ جب سے جدید ٹیکنالوجی نے میوزک کے شعبے میں مشینی گلوکار پیدا کیے ہیں۔

’’ایکسپریس‘‘ سے گفتگو کرتے ہوئے رزکمالی نے کہا کہ آج کے دور میں ہمارے ملک میں فلمیں توجدید ٹیکنالوجی سے بنائی جارہی ہیں لیکن میوزک کے شعبے پرکچھ خاص توجہ نہیں دی جارہی ہے۔  جب سے جدید ٹیکنالوجی نے میوزک کے شعبے میں قدم رکھا ہے، تب سے میوزک کی دنیا میں ایسے بہت سے لوگ سامنے آچکے ہیں،جن کو مشینی گلوکار کہیں توغلط نہ ہوگا۔

ماڈل و اداکارہ کا کہنا تھا کہ ایک طرف توان کی اکثریت نے موسیقی کی کوئی باقاعدہ تعلیم حاصل نہیں کی ہوئی اس کے علاوہ میوزک سے لگاؤ بھی بس ملاجلا سا ہی لگتا ہے۔ حالانکہ پاکستان اوربھارت میں فلمی موسیقی کا سکوربہت زبردست رہا ہے۔ شہنشاہ غزل مہدی حسن، محمد رفیع، ملکہ ترنم نورجہاں، کشور کمار، فریدہ خانم، لتامنگیشکر، آشا بھوسلے اوربہت سے دیگرکے گیت آج بھی نوجوانوں میں بے حد مقبول ہیں۔

رزکمالی نے کہا کہ اگرآج کے دورمیں بننے والی فلموں میں بھی ماضی کی طرح میوزک پرخاص توجہ دی جائے اوربطورپلے بیک سنگرایسی آوازیں تلاش کی جائیں جولوگوں کے دلوں پرراج کرسکیں تواس کا فائدہ فلم کے بزنس پرہوگا، اس کے علاوہ شائقین کی بڑی تعداد بھی سینما گھروں کا زیادہ رخ کرے گی۔

 

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔