دہشتگردی کیس میں ایم کیو ایم کنوینئر خالد مقبول مفرور قرار

ویب ڈیسک  ہفتہ 11 اگست 2018
اشتعال انگیز تقاریر اور میڈیا ہاؤسز حملہ کیس میں انسداد ہشتگردی عدالت نے حتمی چالان منظور کرلئے فوٹو:فائل

اشتعال انگیز تقاریر اور میڈیا ہاؤسز حملہ کیس میں انسداد ہشتگردی عدالت نے حتمی چالان منظور کرلئے فوٹو:فائل

 کراچی: انسداد دہشت گردی عدالت نے ایم کیو ایم پاکستان کے سربراہ خالد مقبول صدیقی کو مفرور قرار دیتے ہوئے وارنٹ گرفتاری جاری کردیے۔

کراچی کی انسداد ہشتگردی عدالت میں بانی ایم کیو ایم کی اشتعال انگیز تقاریر اور 22 اگست کو میڈیا ہاؤسز پر حملے سمیت متعدد مقدمات کی سماعت ہوئی۔  فاروق ستار، خواجہ اظہار، قمر منصور، کنور نوید، عامر خان، ساتھی اسحاق، ریحان ہاشمی، روف صدیقی اور دیگر ملزمان عدالت میں پیش ہوئے۔ ملزمان کے وکلا کو مقدمے کے دستاویزات فراہم کی گئیں۔

پولیس نے تین مقدمات میں حتمی چالان پیش کردئیے جو عدالت نے منظور کرلئے۔ پولیس نے چالان میں ایم کیو ایم پاکستان کے کنویئنر خالد مقبول صدیقی اور بانی ایم کیو ایم کو مفرور قرار دے دیا۔

عدالت نے ایم کیو ایم بانی اور خالد مقبول صدیقی سمیت دیگر کے وارنٹ گرفتاری جاری کرتے ہوئے حکم دیا کہ ملزمان کو گرفتار کرکے پیش کیا جائے، آئندہ سماعت میں ملزمان پر فرد جرم عائد کی جائے گی۔ عدالت نے سماعت 8 ستمبر تک ملتوی کردی۔



ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔