منشیات اسمگلنگ کیس میں گرفتار یورپی ماڈل عدالت میں مرکز نگاہ بن گئی

ویب ڈیسک  بدھ 12 ستمبر 2018
 عدالت نے کیس کی سماعت 18 ستمبر تک ملتوی کردی: فوٹو: فائل

عدالت نے کیس کی سماعت 18 ستمبر تک ملتوی کردی: فوٹو: فائل

لاہور: منشیات اسمگل کرتے ہوئے رنگے ہاتھوں پکڑی گئی یورپی ماڈل ٹریزا ہیلسکی نے عدالت پیشی کے دوران اپنی سج دھج سے ایان علی کی یاد تازہ کردی۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق 21 سالہ ٹریزا ہیلسکی کا تعلق یورپی ملک جمہوریہ چیک سے ہے، اسے رواں برس لاہور ایئر پورٹ سے متحدہ عرب امارات جاتے ہوئے اس وقت گرفتارکیا گیا تھا جب اس کے سامان سے 9 کلوگرام منشیات برآمد ہوئی تھی۔ ٹریزا بھی منشیات اسمگلنگ کی کوشش کا اعتراف جرم کرچکی ہے اور معاملہ عدالت میں زیرسماعت ہے۔

بدھ کے روز ٹریزا کو لاہورکی سیشن عدالت میں پیش کیا گیا لیکن غیرملکی ماڈل کورنگے ہاتھوں گرفتار کرنے والے کسٹم انسپکٹر کا بطور گواہ بیان قلمبند نہیں کیا جاسکا۔ عدالت نے کیس کی سماعت 18 ستمبر تک ملتوی کردی۔

دوسری جانب عدالت میں پیشی کے دوران ٹریزا اپنی سج دھج کے باعث سائلین اورعملے کی مرکز نگاہ بن گئی، سیاہ کرتے اورنیلی جینز کے ساتھ انہوں نے دوپٹہ لیا ہوا تھا، ٹریزا جہاں آنکھوں پر چشمہ لگا کرسورج کے گرم شعاعوں کو روکنے کی کوشش میں مصروف تھی وہیں وہ کاغذ کے ٹکڑے کی مدد سے گرمی کا زورتوڑنے کے لیے خود کو پنکھا بھی جھل رہی تھی۔

وکیل اور پولیس اہلکاروں کے ہمراہ آتے ہوئے جب ٹریزا نے دیکھا کہ ان کی وڈیو بنائی جارہی ہے تو اس انداز سے مسکرائیں کہ جیسے وہ عدالت میں پیشی کے لیے نہیں بلکہ ماڈلنگ پر جارہی ہو۔

واضح رہے کہ اس سے قبل پاکستانی سپرماڈل ایان علی بھی کروڑوں روپے مالیت کی غیرملکی کرنسی اسمگل کرتے ہوئے رنگے ہاتھوں پکڑی گئی تھیں اور وہ بھی ہر پیشی پر منفرد انداز میں پیش ہوا کرتی تھیں۔



ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔