کالے ہرن شکار کا کیس؛ سیف، سونالی اور تبو ایک بار پھر مشکل میں

ویب ڈیسک  ہفتہ 15 ستمبر 2018
کالے ہرن شکار کیس میں سلمان خان کو 5 سال کی سزا سنائی جا چکی ہے فوٹو:فائل

کالے ہرن شکار کیس میں سلمان خان کو 5 سال کی سزا سنائی جا چکی ہے فوٹو:فائل

راجستھان: بھارتی ریاست راجستھان کی حکومت نے کالے ہرن شکار کیس میں بری ہونے والے اداکاروں کے خلاف ہائی کورٹ میں اپیل دائر کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق بھارتی ریاست راجستھان کی حکومت نے فیصلہ کیا ہے کہ 20 سال پرانے کالے ہرن شکار کیس میں بری ہونے والے بالی ووڈ اداکاروں سیف علی خان، سونالی بیندرے، تبو اورنیلم کوٹھاری کے خلاف ہائی کورٹ سے رجوع کیا جائے گا۔

رواں سال کی ابتدا میں راجستھان کی مقامی عدالت نے کالے ہرن شکار کیس میں اداکار سلمان خان کو 5 سال قید کی سزا سنائی تھی جب کہ اسی کیس میں ان کے ساتھ شامل دیگر اداکاروں سیف علی خان، سونالی بیندرے، تبو اور نیلم کوٹھاری کو بری کردیا تھا۔

اس خبرکوبھی پڑھیں: سلمان خان کو 5 سال قید کی سزا

لیکن اب ایسا لگتا ہے کہ راجستھان حکومت عدالتی فیصلے سے خوش نہیں تھی اسی لیے حکومت اب مقامی عدالت کے فیصلے کو کالعدم قرار دلانے کے لیے ہائی کورٹ سے رجوع کرے گی۔

واضح رہے کہ سلمان خان، سیف علی خان، تبو، سونالی بیندرے اور نیلم کوٹھاری نے 1998ء میں فلم ’’ہم ساتھ ساتھ ہیں‘‘ کی شوٹنگ کے دوران غیر قانونی طور پر کالے ہرن کا شکار کیا تھا۔



ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔