پی آئی اے کی لندن جانیوالی پروازمیں پائلٹ اوراسٹیورڈ کے درمیان جھگڑا

ویب ڈیسک  ہفتہ 15 ستمبر 2018
کپتان کےاعتراض پر طیارے کے دیگر عملے نے بھی فلائٹ اسٹیورڈ کو سوار کرنے سے انکار کردیاا،فوٹو: فائل

کپتان کےاعتراض پر طیارے کے دیگر عملے نے بھی فلائٹ اسٹیورڈ کو سوار کرنے سے انکار کردیاا،فوٹو: فائل

 لاہور: قومی فضائی کمپنی پی آئی اے کی بین الاقوامی پرواز کپتان اوراسٹیورڈ کے درمیان جھگڑے کے باعث تین گھنٹے کی تاخیر کا شکار ہوگئی۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق لاہور سے لندن جانے والی پی آئی اے کی پرواز پی کے 757 کو صبح ساڑھے نو بجے روانہ ہونا تھا تاہم اس دوران طیارے کے کپتان اور اسٹیورڈ کے درمیان جھگڑا شروع ہوگیا،کپتان انوار چوہدری نے اسٹیورڈ اویس قریشی کو جہاز میں سوار کرنے سے انکار کرتے ہوئے کہا کہ اسٹیورڈ لندن پرواز اسمگلنگ کیس میں ملوث رہا ہے۔

کپتان کے اعتراض پر طیارے کے دیگر عملے نے بھی فلائٹ اسٹیورڈ کو سوار کرنے سے انکار کردیا جس پر عملے اوراسٹیورڈ کے درمیان کافی دیر بحث و تکرار ہوتی ہے اور اعلیٰ حکام کے بیچ بچاؤ کے بعد پرواز کو3 گھنٹے کی تاخیرکے بعد ساڑھے بارہ بجے اپنی منزل کی جانب روانہ کیا گیا۔

پرواز کی تاخیر پر طیارے میں بیٹھے مسافروں نے بھی احتجاج کیا اور  عملے کے رویے پر سخت ناراضی کا اظہار کیا۔

دوسری جانب ترجمان پی آئی اے کا کہنا ہے کہ پائلٹ اور اسٹیورڈ کے درمیان ہونے والے جھگڑے پر انکوائری شروع کردی گئی ہے،تحقیقات کے بعد جو قصور وار پایا گیا اس کے خلاف قانون کے مطابق کارروائی کی جائے گی۔



ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔