بھارت میں جنونی ہندوؤں نے مسلمان نوجوان کو تشدد کرکے قتل کردیا

ویب ڈیسک  اتوار 16 ستمبر 2018
اہل خانہ غم سے نڈھال، حکومت سے انصاف کی فراہمی کا مطالبہ فوٹو:فائل

اہل خانہ غم سے نڈھال، حکومت سے انصاف کی فراہمی کا مطالبہ فوٹو:فائل

بھارتی ریاست منی پور میں جنونی ہندوؤں نے کار چوری کا الزام لگا کر مسلمان نوجوان کو بہیمانہ تشدد کرکے قتل کر دیا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق واقعہ منی پور کے علاقے تھروئی جام میں پیش آیا جہاں مشتعل ہندوؤں کے ایک ہجوم نے26 سالہ مسلمان نوجوان فاروق خان کو کار چوری کا الزام لگا کر اس پر لاٹھیوں کی بارش کردی اور وحشیانہ تشدد کرکے نوجوان کی جان لے لی۔

یہ بھی پڑھیں: بھارت میں مسلمانوں کو جان بوجھ کر نشانہ بنایا جاتا ہے، تاپسی پنوں کا اعتراف

پولیس نے واقعے میں ملوث پانچ افراد کو گرفتار کیا تو انتہا پسند ہندووں نے ساتھیوں کی رہائی کیلئے پولیس اسٹیشن پردھاوا بول دیا، ملزمان نے پولیس اہلکارں کو بھی  مار مار کر زخمی کردیا۔

دوسری جانب مقتول کے اہل خانہ نے حکومت س انصاف کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ نوجوانوں کی جان لینے والے ملزمان کو قرار واقعی سزا دی جائے۔



ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔