اسکول اساتذہ کی بھرتیاں، ٹیسٹ 4 مضامین میں تقسیم

صفدر رضوی  جمعـء 12 اکتوبر 2018
ٹیسٹ آئی بی اے سکھر کے تحت لیا جائے گا، ’’آنسر شیٹ‘‘ پر امیدوار کی تصویر ہو گی، ’’ایم سی کیوز‘‘ پر مشتمل ٹیسٹ 100 نمبر کا ہو گا۔ فوٹو : فائل

ٹیسٹ آئی بی اے سکھر کے تحت لیا جائے گا، ’’آنسر شیٹ‘‘ پر امیدوار کی تصویر ہو گی، ’’ایم سی کیوز‘‘ پر مشتمل ٹیسٹ 100 نمبر کا ہو گا۔ فوٹو : فائل

 کراچی: صوبائی محکمہ اسکول ایجوکیشن کے تحت سندھ میں سرکاری اسکول اساتذہ کی بھرتیوں کے لیے آئی بی اے سکھرکے تحت منعقد ہونے والے تحریری ٹیسٹ کوچار مضامین میں تقسیم کردیاگیا ہے۔

آئی بی اے سکھرکے رجسٹرار زاہد حسین کھنڈ نے ’’ایکسپریس‘‘سے گفتگو میں تحریری ٹیسٹ کی تفصیلات سے آگاہ کرتے ہوئے بتایاکہ آئی بی اے سکھرکے تحت منعقدہونے والے  ای سی ٹی (ارلی چائلڈ ایجوکیشن) اور جے ای ایس ٹی (جونیئرایلیمنٹری اسکول ٹیچر)کے تحریری ٹیسٹ کے پاسنگ مارکس 60 مقررکیے گئے ہیں اور ٹیسٹ میں 60 نمبر لینے وال اامیدوارکامیاب تصور کی اجائے گا۔

مجموعی طورپر100 نمبر کاتحریری ٹیسٹ مکمل طورپر’’ ایم سی کیوز‘‘ پر مشتمل ہوگا، یہ ایم سی کیوز بھی چارحصوں (انگریزی، سائنس،معلومات عامہ اور ریاضی) پر مشتمل ہوں گے ، ٹیسٹ پیپرکا ہرحصہ 25 نمبر کاہوگا جبکہ مجموعی پاسنگ مارکس 60ہوں گے۔ ٹیسٹ کا دورانیہ ڈیڑھ گھنٹے پرمشتمل ہوگا۔  تحریری ٹیسٹ کاآغازصبح 10بجے ہوگا جوساڑھے 11بجے تک جاری رہے گا۔

واضح رہے کہ ای سی ٹی کے تحریری ٹیسٹ میں پورے سندھ میں مجموعی طوپر17ہزارکے قریب امیدوار جبکہ جے ای ایس ٹی میں 39488 امیدوار شریک ہوں گے۔

آئی بی اے سکھرکے رجسٹرار زاہدحسین نے مزید بتایاکہ ٹیسٹ کی شفافیت کو یقینی بنانے کے لیے امیدوار کوٹیسٹ جوابات تحریرکرنے کے لیے پنسل کے استعمال کی اجازت نہیں ہوگی اور امیدواروں کو بال پوائنٹ استعمال کرنے کا پابندکیاگیا ہے۔ امیدوارکو ان ہی کی تصویرلگی آنسرشیٹ فراہم کی جائے گی جس پرامیدوارکانام اور سیٹ لسٹ بھی پیشگی تحریرہوگا تاکہ کوئی دوسراشخص اصل امیدوارکی جگہ بیٹھ کرپرچہ حل نہ کرسکے۔

زاہدحسین کھنڈکے مطابق آنسرشیٹ کی کاربن کاپی امیدوارکوٹیسٹ کے فوری بعد فراہم کرنے کے ساتھ ساتھ ’’آنسرکی‘‘ کچھ گھنٹوں کے بعد ویب سائٹ پر اپ لوڈ کر دی جائے گی۔

واضح رہے کہ جے ای ایس ٹی کے تحریری ٹیسٹ میں کراچی سے 2309، سکھرسے 9557، لاڑکانہ سے 9181، شہید بینظیر آباد سے 6598، میرپور خاص سے 3708 اور حیدر آباد سے 8135 امیدوار شریک ہوں گے۔



ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔