اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے 6 فلسطینی شہید، 250 زخمی

ویب ڈیسک  جمعـء 12 اکتوبر 2018
اسرائیلی فوج نے غزہ کی سرحد پر احتجاج کرنے والے نہتے فلسطینی باشندوں پر گولیاں برسائیں اور آنسو گیس کا استعمال کیا (فوٹو: فائل)

اسرائیلی فوج نے غزہ کی سرحد پر احتجاج کرنے والے نہتے فلسطینی باشندوں پر گولیاں برسائیں اور آنسو گیس کا استعمال کیا (فوٹو: فائل)

 غزہ: اسرائیلی فوج کی فائرنگ اور آنسو گیس کی شیلنگ سے غزہ کی سرحد پر احتجاج کرنے والے 6 فلسطینی شہید اور 250 زخمی ہوگئے۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق فلسطینی باشندوں کی جانب سے ہر جمعے کو غزہ کی سرحد پر احتجاج کا سلسلہ اس جمعہ بھی جاری رہا جس میں فلسطینی باشندوں نے اپنے حقوق کی خاطر ٹائر جلائے اور نعرے بازی کی۔ اس دوران اسرائیلی فوج نے سرحد کے قریب آنے والے نہتے فلسطینی باشندوں پر گولیاں برسائیں جس کے باعث 6 معصوم فلسطینی شہید ہوگئے۔

فلسطین نیوز ایجنسی کے مطابق اسرائیل فوج نے بہت بڑی تعداد میں ربڑ کی گولیاں بھی برسائیں اور آنسو گیس کی شیلنگ کی جس کے باعث 250 سے زائد افراد زخمی ہوئے ہیں۔

واضح رہے کہ اسرائیل نے فلسطین کے حقوق سلب کرتے ہوئے تل ابیب کے بجائے مقبوضہ بیت المقدس کو اپنا دارالحکومت قرار دیا ہے جس پر امریکا نے اپنا سفارت خانہ تل ابیب سے بیت المقدس منتقل کردیا ہے۔ اس وقت سے فلسطینی باشندوں کے احتجاج میں شدت آگئی ہے اور مظاہرین کی جانب سے غزہ کی سرحد پر ہر جمعے کو احتجاج کیا جاتا ہے۔



ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔