شاہ زیب قتل کیس؛ شاہ رخ جتوئی نے فیصلے کے خلاف سندھ ہائیکورٹ میں اپیل دائر کردی

ویب ڈیسک  بدھ 12 جون 2013
ماتحت عدالت کے فیصلے کو کالعدم قرار دیتے ہوئے شاہ زیب جتوئی کر باعزت بری کیا جائے، وکیل شاہ رخ جتوئی۔ فوٹو: فائل

ماتحت عدالت کے فیصلے کو کالعدم قرار دیتے ہوئے شاہ زیب جتوئی کر باعزت بری کیا جائے، وکیل شاہ رخ جتوئی۔ فوٹو: فائل

کراچی: شاہ زیب قتل کیس کے مرکزی ملزم شاہ رخ جتوئی نے سزائے موت کے فیصلے کے خلاف سندھ ہائی کورٹ میں اپیل دائر کردی ہے۔

شاہ زیب قتل کیس کے مرکزی ملزم شاہ رخ جتوئی  کے وکیل نے عدالتی فیصلے کے خلاف سندھ ہائی کورٹ میں اپیل دائر کرتے ہوئے  موقف اختیارکیا ہے کہ  انسداد دپشت گردی کی خصوصی عدالت نے سزا دینے کے فیصلے میں شہادتوں کو نظر انداز کیا، کیس میں ملوث گواہوں کے بیانات میں بھی تضاد ہے اس لئے ماتحت عدالت کے فیصلے کو کالعدم قرار دیتے ہوئے شاہ زیب جتوئی کر باعزت بری کیا جائے۔

واضح رہے کہ انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت نے شاہ زیب قتل کیس کے مرکزی ملزم شاہ رخ جتوئی اور سراج تالپور کو سزائے موت جبکہ سجاد تالپور اور غلام مرتضیٰ لاشاری کو عمر قید کی سزا سنائی تھی، عدالت نے چاروں مجرموں پر5،5 لاکھ روپے جرمانہ عائد کرنے کے ساتھ انہیں سندھ ہائی کورٹ میں سزا کے خلاف اپیل کےلئے 7 دن کی مہلت بھی دی تھی۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔