مفادپرست فلم انڈسٹری کی تباہی کے ذمے دارہیں، بابرہ شریف

شوبز رپورٹر  جمعرات 27 جون 2013
نگار خانوں کی حالت دیکھ کردل خون کے آنسوروتا ہے،’’ایکسپریس‘‘ سے گفتگو۔ فوٹو: فائل

نگار خانوں کی حالت دیکھ کردل خون کے آنسوروتا ہے،’’ایکسپریس‘‘ سے گفتگو۔ فوٹو: فائل

لاہور: لیجنڈ اداکارہ بابرہ شریف نے کہا ہے کہ پاکستان فلم انڈسٹری کی تباہی کے ذمے دار وہی مفادپرست ہیں جنہوں نے یہاں سے کروڑوں روپے کمائے اورجائیدادیں بنائی مگراس کی سپورٹ کے لیے کچھ نہ کیا۔

فلم انڈسٹری نے بہت سے لوگوں کو دولت مند بنایا اورشہرت کی بلندیوں پرپہنچایا لیکن ان لوگوں نے وقت کے بدلتے ہی اسے تنہاچھوڑ دیا جس کی وجہ سے آج نگار خانے اورسینما گھرویران پڑے ہیں۔ ان خیالات کااظہاربابرہ شریف نے ’’ایکسپریس‘‘ کو انٹرویودیتے ہوئے کیا۔ انھوں نے کہا کہ موجودہ حالات میں پڑھے لکھے نوجوانوں کو فلم انڈسٹری کی بحالی میں اہم کردار اداکرنا ہوگا۔ اس وقت ہمارے ملک کے مختلف تعلیمی اداروں میں فلم میکنگ ، ڈائریکشن، موسیقی کی باقاعدہ تربیت دی جارہی ہے اوربہت سے نوجوان توامریکا، برطانیہ اورکینیڈا سے فلمسازی کی تعلیم حاصل کرکے آئے ہیں۔ اگریہ لوگ مل کربین الاقوامی معیارکی فلمیں بنائیں توپاکستان فلم انڈسٹری کو سپورٹ مل سکتی ہے۔

ماضی میں کام کرنیوالے لوگ اپنے کام سے بہت پیارکرتے تھے۔ دن رات اسٹوڈیو کے فلوروں پرشوٹنگزکا سلسلہ جاری رہتا تھا اوریہی وجہ ہے کہ جب سینما گھروں میں فلمیں نمائش کے لیے پیش کی جاتی تھیں توفلم بینوںکی بڑی تعداد اپنی فیملیزکے ہمراہ وہاں موجود ہوتی تھی۔ سرکٹ کے سینما گھروں کے باہراکثر’ہاؤس فل‘کے بورڈ دکھائی دیتے تھے جب کہ آج سینماگھروں اورنگارخانوں کی حالت دیکھ کردل خون کے آنسو رونے لگتا ہے۔ اس لیے میں سمجھتی ہوںکہ فلم انڈسٹری کی بحالی کے لیے جہاں حکومت کے تعاون کی اشدضرورت ہے وہیں ہم سب کوبھی مل کراس کی سپورٹ کے لیے آگے آنا ہوگا اوربہترین معیاری فلمیںبناناہونگی تاکہ روٹھے ہوئے فلم بینوںکو دوبارہ سینما گھروں تک لایا جاسکے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔