ذاکر مستانہ ایک بار پھر تھیٹر کی بحالی کے لیے کوشاں

کلچرل رپورٹر  جمعرات 27 جون 2013
انھوں نےایک نئےعزم کے ساتھ کام شروع کیا ہے کیونکہ تھیٹر ہماری پہچان ہے اور اسے ہم ختم نہیں ہونے دیں گے, ذاکر مستانہ. فوٹو: فائل

انھوں نےایک نئےعزم کے ساتھ کام شروع کیا ہے کیونکہ تھیٹر ہماری پہچان ہے اور اسے ہم ختم نہیں ہونے دیں گے, ذاکر مستانہ. فوٹو: فائل

کراچی:  معروف مزاحیہ اداکار ذاکر مستانہ نے کراچی میں تھیٹر کی بحالی اور نئے سرے سے تھیٹر سرگرمیوں کا آغاز کردیا۔

گزشتہ دنوں  کراچی کے مقامی ہوٹل میں انھوں نے اپنے اسٹیج ڈرامے ’’کیا کراچی بیمار ہے‘‘ کی افتتاحی تقریب  منعقد کی جس میں  کراچی اسٹیج کے نامور فنکاروں نے بہت بڑی تعداد میں شرکت کی ، اسٹیج کے فنکاروں نے ذاکر مستانہ کی کوششوں کا سراہتے ہوئے زبردست خراج تحسین پیش کیا، فنکاروں کا کہنا تھا اگر سب مل اسی طرح کوششیں کریں تو بہت جلد کراچی میں تھیٹرکی رونقیں لوٹ آئیں گی، ذاکر مستانہ نے کہا کہ انھوں نے ایک نئے عزم کے ساتھ کام شروع کیا ہے کیونکہ تھیٹر ہماری پہچان ہے اور اسے ہم ختم نہیں ہونے دیں گے۔

کیا کراچی بیمار ہے کی افتتاحی تقریب سے پروڈیوسر زاہد شاہ، شہنی عظیم، شکیل شاہ، خادم حیسن اچوی،صدیق راجہ،عابد حسین مرزا اور دیگر نے خطاب کیا، کیا کراچی بیمار ہے یکم جولائی کو آرٹس کونسل کے اوپن ائیر آڈیٹوریم میں پیش کیا جائے گا اس ڈرامے کے مصنف اور ہدایت کار ذاکر مستانہ ہیں جب کہ اس ڈرامے میں جاوید حیدر،ندا بلوچ، شانی اقبال، شہنی عظیم،خالد شیخ،علی،فائزہ معین، رحیم انوکھا، شکیل شاہ، سلیم شیخ، کمال ادریس،عارف شیخ اور دیگر اپنے فن کا مظاہرہ کریں گے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔