بھارتی شادیوں میں اجنبی افراد کی رقم کے بدلے شرکت کا بڑھتا ہوا رحجان

ویب ڈیسک  جمعرات 22 نومبر 2018
بھارتی شادیوں کے ٹکٹ فروخت کرکےغیرملکیوں کو مدعو کررہے ہیں۔ فوٹو: جوائن مائی ویڈنگ ویب سائٹ

بھارتی شادیوں کے ٹکٹ فروخت کرکےغیرملکیوں کو مدعو کررہے ہیں۔ فوٹو: جوائن مائی ویڈنگ ویب سائٹ

نئی دہلی: اگرچہ شادی کی تقاریب میں قریبی عزیزوں اور رفقا کو ہی مدعو کیا جاتا ہے لیکن بھارت میں شادیوں کی تقاریب کئی دن جاری رہتی ہیں اور ان میں نہ صرف اجنبیوں بلکہ غیرملکی سیاحوں کو بھی بلایا جارہا ہے اور اس کے بدلے ان سےمعاوضہ لیا جارہا ہے۔

بھارتی ویب سائٹ غیرملکیوں کو ہندوستانی شادیوں میں مدعو کررہی ہے جسے بیاہ کی سیاحت یا ویڈنگ ٹورزم کا نام دیا جارہا ہے اس ضمن میں جوائن مائی ویڈنگ نامی ویب سائٹ بہت مقبول ہورہی ہے۔ ویب سائٹ پر ایسے جوڑوں کی تصاویر دیکھی جاسکتی ہیں جن کی شادی مستقبل میں ہونے والی ہے اور وہ غیرملکیوں کو خوش آمدید کہنا چاہتے ہیں۔ اس ضمن میں ویب سائت اپنا کچھ معاوضہ رکھتی ہے۔

ویب سائٹ کے مطابق اس طرح غیرملکی افراد کم وقت میں بھارتی ثقافت سے آگاہ ہوسکتے ہیں اور شادیوں کی تقاریب کا تجربہ اور خوشی میں شریک ہوسکتے ہیں، اس کے ساتھ ساتھ غیرملکی مقامی کھانوں اور مزاج سے بھی واقفیت حاصل کرسکتے ہیں۔

ویب سائٹ کی بانی اورسی پرکانی کہتی ہیں کہ اب تک 25 بھارتی شادیوں میں 100 سے زائد غیرملکی سیاح شریک ہوچکے ہیں اور دونوں جانب سے اس کی ضرورت بڑھ رہی ہے۔ وہ کہتی ہیں کہ تقریب میں غیرملکی سیاح خصوصی مہمان ہوتے ہیں اور سب گھر والے ان کا خیال رکھتے ہیں۔ اسی طرح بعض خاندان سیاحوں کے لیے مقامی لباس بھی تیار کرکے دیتے ہیں۔

اس ضمن میں ایک دن کی تقریب کے لیے غیرملکیوں سے 150 ڈالر اور دو روزہ تقریب کے لیے 250 ڈالر کی رقم لی جاتی ہے۔ اگرچہ اس میں فراڈ کا امکان رہتا ہے اور اسی بنا پر ویب سائٹ کے اراکین شادی والے گھر کے ذمے داروں سے گھنٹوں بات کرتے ہیں اور سیاحوں کی حفاظت کے ہر پہلو کو مدِ نظر رکھا جاتا ہے۔



ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔