الطاف حسین رضا کارانہ طور پر پارٹی قیادت سے سبکدوش،اختیارات رابطہ کمیٹی کےسپرد

ویب ڈیسک  اتوار 30 جون 2013
عمران فاروق قتل کیس عدالت عالیہ میں چلا تو وکیل کی خدمات لینے کے بجائے اپنا مقدمہ خعد لڑوں گا، الطاف حسین۔ فوٹو : فائل

عمران فاروق قتل کیس عدالت عالیہ میں چلا تو وکیل کی خدمات لینے کے بجائے اپنا مقدمہ خعد لڑوں گا، الطاف حسین۔ فوٹو : فائل

لندن: متحدہ قومی موومنٹ کے قائد الطاف حسین نے رضا کارانہ طور پر پارٹی قیادت سے سبکدوش ہوکر اختیارات رابطہ کمیٹی کےسپرد کردئیے ہیں۔

الطاف حسین نے اپنے بیان میں کہا کہ لندن میں اسکاٹ لینڈ یارڈ اور میٹرو پولیٹن پولیس نے ان کے گھر پر چھاپہ مارا اور کئی چیزیں اٹھا کرلےگئے، کروڑوں افراد کے قائد کے گھر پر چھاپہ مارا گیا۔ایسی صورت حال کا یہی تقاضا ہے کہ وہ اپنی پارٹی کی قیادت سے خود سبکدوش ہوجائیں۔

ایم کیو ایم کے قائد کا کہنا تھا کہ عمران فاروق قتل کیس عدالت عالیہ میں چلا تو وہ کسی سولیسٹر، بیرسٹر یا وکیل کی خدمات حاصل کرنے کے بجائے اپنا مقدمہ خعد لڑیں گے۔ عدالت جو بھی فیصلہ دے وہ اسے من وعن قبول کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ عوام اپنا اعتماد برقرار رکھتے ہوئے حق پرستانہ جدوجہد جاری رکھیں عوام اتحاد برقرار رکھیں۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔