پشاورکی تنگ گلیوں سے رکشہ سروس کے ذریعے کچرا اٹھانے کا فیصلہ

شاہ زیب خان  پير 3 دسمبر 2018
رکشہ اور کنٹینر سروس گرین اینڈ کلین پاکستان منصوبے کا حصہ ہے، ترجمان ڈبلیو ایس ایس پی فوتو: ایکسپریس

رکشہ اور کنٹینر سروس گرین اینڈ کلین پاکستان منصوبے کا حصہ ہے، ترجمان ڈبلیو ایس ایس پی فوتو: ایکسپریس

پشاور: واٹر سینی ٹیشن سروس نے اندرون شہر کی تنگ گلیوں سے رکشہ سروس کے ذریعے کچرا اٹھانے کا فیصلہ کیا ہے۔

واٹر سینی ٹیشن سروس پشاور نے اندرون شہر میں گندگی کو ٹھکانے لگانے کے لئے مزید اقدامات اٹھاتے ہوئے رکشہ سروس شروع کردی ہے، اس مقصد کے لئے 16 رکشے منگوائے گئے۔ شہر کی تنگ گلیوں میں جہاں واٹر سینی ٹیشن سروس کی گاڑیاں نہیں پہنچ سکتی تھیں وہاں رکشہ سروس کے ذریعے کچرا اٹھایا جائے گا جس سے کم وقت میں زیادہ کچرا ٹھکانے لگایا جائے گا۔

واٹر سینی ٹیشن سروس کے ترجمان حسن علی نے کہا کہ شہر کے اندرون علاقوں میں تنگ گلیوں سے گندگی نکالنے میں کافی مشکلات پیش آ رہی تھی جس کی وجہ سے شہریوں کو بھی کافی شکایات تھی اس مقصد کیلئے 16 رکشے اور 20 کنٹینرز منگوائے ہیں تا کہ تنگ گلیوں میں ہاتھ گاڑی کے ذریعے کچرا اٹھانے کی بجائے رکشے استعمال کیے جائیں جس سے کم وقت میں زیادہ صفائی ہو سکے گی، مطلوبہ نتائج حاصل ہونے پر رکشوں کی تعداد بڑھائی جائے گی۔

 



ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔