چین نے امریکی کاروں پر ٹیکس کی شرح کم کرنے پر رضامندی ظاہر کردی، ٹرمپ

ویب ڈیسک  پير 3 دسمبر 2018
امریکا اور چین کے صدور کے درمیان نئے ٹیکس کو 90 دن کے لیے موخر کرنے پر اتفاق ہوا تھا۔ فوٹو : فائل

امریکا اور چین کے صدور کے درمیان نئے ٹیکس کو 90 دن کے لیے موخر کرنے پر اتفاق ہوا تھا۔ فوٹو : فائل

 واشنگٹن: امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا ہے کہ چین امریکی کاروں پر ٹیکس کی شرح کو 40 فیصد سے کم کردے گا۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق امریکا اور چین کے صدور کے درمیان جی-20 سمٹ کے درمیان ملاقات کے ثمرات سامنے آنے لگے ہیں، چین نے امریکی مصنوعات پر ٹیکس ختم یا کم کرنے کا عندیہ دے دیا ہے۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا کہ چین نے امریکا سے ایکسپورٹ ہونے والی کاروں پر عائد 40 فیصد برآمدی ٹیکس کو کم کرنے پر رضامندی ظاہر کردی ہے تاہم اس حوالے سے مزید معلومات فراہم نہیں کی گئی اور نہ ہی چین کی جانب سے کوئی ردعمل سامنے آیا ہے۔

امریکی صدر اور چینی ہم منصب کے درمیان جی-20 سمٹ کے حاشیے میں اہم ملاقات کے دوران 90 دن کے لیے نئے ٹیکس کے اطلاق کو موخر کرنے پر اتفاق کیا گیا تھا جب کہ دونوں رہنماؤں نے ان 90 دنوں میں تجارتی تنازعات کو حل کرنے کے لیے مذاکرات کی ضرورت پر زور دیا تھا۔

یہ خبر بھی پڑھیں : امریکا اور چین نے ایک دوسرے پر عائد نئے ٹیکس معطل کردیے

واضح رہے کہ رواں برس امریکا اور چین کے درمیان تجارتی جنگ میں شدت دیکھنے میں آئی ہے اور دونوں ممالک نے ایک دوسرے کی برآمدی اشیاء پر ٹیکس عائد کرنے کا نہ رکنے والا محاذ کھول رکھا تھا۔



ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔