لیکسمبرگ دنیا کا وہ پہلا ملک جہاں پبلک ٹرانسپورٹ مفت ہوگی

ویب ڈیسک  جمعـء 7 دسمبر 2018
آئندہ سال موسم ِ گرما سے ٹرین، بسوں اور ٹرامز میں شہری بغیر کرائے کے سفر کرسکیں گے،وزیراعظم

آئندہ سال موسم ِ گرما سے ٹرین، بسوں اور ٹرامز میں شہری بغیر کرائے کے سفر کرسکیں گے،وزیراعظم

لیگزمبر سٹی: یورپی ملک لیکسمبرگ کی حکومت نے شہریوں کے لیے آئندہ سال سے ہر قسم کی پبلک ٹرانسپورٹ کو مفت کرنے کا اعلان کردیا۔

بین الاقوامی میڈیا رپورٹس کے مطابق حال ہی میں لیکسمبرگ  کے وزیراعظم ژاویر بیٹل نے دوسری مدت کے لیے وزارت عظمیٰ کا منصب سنبھالا ہے، اور اس موقع پر اتحادی حکومت نے اعلان کیا ہے کہ آئندہ برس یعنی 2019 کی گرمیوں تک ملک میں ہرقسم کی پبلک ٹرانسپورٹ کو مفت کردیا جائے گا۔

آئندہ سال موسم ِ گرما سے ٹرین، بسوں اور ٹرامز میں شہری بغیر کرائے کے سفر کرسکیں گے، اس اقدام کا مقصد ٹریفک کے اژدھام  سے جان چھڑا کر ماحولیاتی تبدیلیوں پر قابو پانا ہے۔

لیکسمبرگ  آبادی کے لحاظ سے ایک چھوٹا  ملک ہے تاہم اس کا شمار یورپی یونین کے امیر ترین ممالک میں ہوتا ہے،   یہاں ہر ایک ہزار اشخاص میں سے 662 افراد کے پاس اپنی گاڑیاں ہیں جس کی وجہ سے سڑکوں پر ٹریفک جام رہتا ہے اور ایندھن کے استعمال سے ماحول بھی آلودہ ہوتا ہے جب کہ قریباً 2 لاکھ افراد پڑوسی ممالک، فرانس، جرمنی، بیلجیم وغیرہ سے روزانہ  لیکسمبرگ  میں ملازمت کے غرض سے داخل ہوتے ہیں۔



ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔