کاٹنے کی قوت میں چڑیا نے ٹی ریکس ڈائنوسار کو پیچھے چھوڑدیا

ویب ڈیسک  جمعرات 10 جنوری 2019
ننھی منی فنچ چڑیا کے کاٹ کھانے کی قوت جسامت کے لحاظ سے تمام جانداروں سے زیادہ ہے۔ فوٹو: یونیورسٹی آف ریڈنگ

ننھی منی فنچ چڑیا کے کاٹ کھانے کی قوت جسامت کے لحاظ سے تمام جانداروں سے زیادہ ہے۔ فوٹو: یونیورسٹی آف ریڈنگ

 لندن: اگر جسم کے لحاظ سے موازنہ کیا جائے تو گلاپاگوس کے جزائر پر پائی جانے والی ایک چھوٹی سی چڑیا کے کاٹنے کی قوت اس سے ہزاروں گنا بڑے ڈائنوسار سے زیادہ ہوتی ہے اور حال ہی میں برطانوی سائنسدانوں نے یہ حیرت انگیز انکشاف کیا ہے۔

یونیورسٹی آف ریڈنگ کے مطابق مشہور گوشت خور ڈائنوسار، ٹی ریکس کا وزن آٹھ ٹن ہوتا ہے جبکہ وہ پوری قوت سے جبڑے بند کرے تو اس عمل میں 57 ہزار نیوٹن کی قوت پیدا ہوتی ہے ۔ دوسری جانب صرف 33 گرام وزنی ننھی سی چڑیا فنچ کے کاٹ کھانے کی قوت اس کے اپنے وزن کے لحاظ سے دنیا کے تمام معلومہ جانداروں میں سب سے زیادہ ہے جو ٹی ریکس کے جبڑا بند کرنے کی طاقت سے 320 گنا زائد ہے۔

برطانیہ کی یونیورسٹی آف رینڈنگ سے وابستہ ڈاکٹر مونوبو ساکاموٹو کے مطابق ہم ٹی ریکس جیسے دیوہیکل جانور کے جبڑوں کو دیکھ کر حیران رہ جاتے ہیں اور سوچتے ہیں کہ شاید اس کا جبڑا سب سے طاقتور ہوگا لیکن اس جانور کی جسامت کو دیکھتے ہوئے یہ بات درست نہیں۔ اس کے مقابلے میں گلاپاگوس کی چڑیا اس سے کہیں زیادہ قوت رکھتی ہے جس سے اب تک سائنس ناواقف تھی۔ اس طرح یہ ڈائنوسار فنچ کا مقابلہ نہیں کرسکتا۔

ماہرین نے سپرکمپیوٹر اور جدید آلات کی مدد سے 434 ایسے جانوروں کے کاٹنے کی قوت کا جائزہ لیا جو موجود ہیں یا معدوم ہوچکے ہیں۔ اس کے علاوہ ماہرین نے ان جانداروں کے ارتقا اور ان کی دیگر کیفیات کا بھی جائزہ لیا ہے۔ اس مقابلے میں فنچ کی کارکردگی حیرت انگیز ثابت ہوئی۔



ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔