شہر کی شاہراہوں پر پارکنگ اور دھلائی مافیا نے قبضہ کرلیا

اسٹاف رپورٹر  پير 15 جولائ 2013
صفائی کرنیوالے کاریگر نے فٹ پاتھ پر اوزار سجا کر رکھے ہوئے ہیں۔ فوٹو: ایکسپریس

صفائی کرنیوالے کاریگر نے فٹ پاتھ پر اوزار سجا کر رکھے ہوئے ہیں۔ فوٹو: ایکسپریس

کراچی: شہر کی اہم شاہراہوں پر پولیس کی مبینہ سرپرستی میں غیر قانونی کار پارکنگ اور وہیں پر گاڑیوں کی دھلائی کرنے والی مافیا نے شہریوں کی زندگی اجیرن کردی۔

گاڑیاں پارک کرنے والے شہری گاڑیاں دھونے والے عملے کو رقم نہ دے تو وہ ٹریفک پولیس کو مطلع کرکے گاڑی اٹھوادیتے ہیں جبکہ غیر قانونی پارکنگ سے ٹریفک جام کا مسئلہ سنگین صورتحال اختیار کر گیا ہے ، شہرکی شاہراہوں نیو ایم اے جناح روڈ، شارع عراق اور لیاقت آباد میں غیر قانونی کار پارکنگ اور گاڑیاں دھونے والے عملے نے علاقہ پولیس اور ٹریفک پولیس کی مبینہ سرپرستی میں شہریوں کو لوٹنا شروع ہے۔

پریڈی کے علاقے صدر پاسپورٹ آفس شارع عراق پر غیر قانونی پارکنگ کرانے اور ان گاڑیوں کو دھونے کے لیے شہریوں سے رقم بٹوری جاتی ہے جو شخص رقم دینے سے انکار کرے تو اس کی گاڑی نوپارکنگ کے نام پر اٹھوادی جاتی ہے بعدازاں گاڑی کا مالک چالان ادا کرکے گاڑی چھڑا پاتا ہے،شارع عراق پر یہ گاڑیاں دھونے والوں کا یہ دھندہ عرصے سے پولیس اور ٹریفک پولیس کی مبینہ سرپرستی میں جاری ہے۔

عملہ شہریوں سے نوپارکنگ زون میں اس شرط پر گاڑی پارک کرواتے ہیں کہ وہ گاڑی صاف کروائیں گے جس کے وہ 50  سے 150 روپے طلب کرتے ہیں بصورت دیگر گاڑی کو ٹریفک پولیس لفٹر سے نوپارکنگ کے نام پر اٹھوا دیا جاتا ہے اور پھر  ٹریفک پولیس کو بھاری جرمانہ ادا کر کے گاڑی آرٹلری میدان تھانے سے ملحقہ ٹریفک پولیس کے پارکنگ لاٹ سے چھڑائی جاتی ہے،ذرائع کے مطابق شارع عراق پر غیر قانونی کار پارکنگ میں ملوث مافیا پریڈی پولیس اور سندھ سیکریٹریٹ ٹریفک پولیس سیکشن کے عملے کو بھاری نذرانہ دیتی ہے، گاڑیاں پارک کرنے اور دھونے والی مافیا کھلے بندوں ڈھٹائی کے ساتھ اپنے دھندے میں مصروف ہے اگر کوئی شہری اعلیٰ حکام کو شکایت بھی کردے تو بات انکوائری سے آگے نہیں بڑھتی۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔