سانحہ اے پی ایس ازخود نوٹس؛ کمیشن کو تحقیقات مکمل کرنے کیلیے مزید ایک ماہ کی مہلت

ویب ڈیسک  پير 14 جنوری 2019
سانحہ آرمی پبلک اسکول کی تحقیقات کے لیے کمیشن چیف جسٹس کی ہدایت پر بنایا گیا فوٹو: فائل

سانحہ آرمی پبلک اسکول کی تحقیقات کے لیے کمیشن چیف جسٹس کی ہدایت پر بنایا گیا فوٹو: فائل

 اسلام آباد: سپریم کورٹ نے سانحہ اے پی ایس از خود نوٹس نمٹاتے ہوئے کمیشن کو تحقیقات مکمل کرنے کے لیے مزید ایک ماہ کی مہلت دے دی۔

چیف جسٹس پاکستان جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے 3 رکنی بینچ نے سانحہ اے پی ایس از خود نوٹس کی سماعت کی، چیف جسٹس کے استفسار پر ایڈووکیٹ جنرل خیبر پختونخوا نے بتایا کہ کمیشن نے 109 گواہان کے بیان ریکارڈ کر لئے ہیں، کمیشن نے مزید ایک ماہ کا وقت مانگا ہے۔

سپریم کورٹ نے کمیشن کی مزید وقت دینے کی استدعا منظور کرتے ہوئے حکم دیا کہ کمیشن جتنی جلدی ہوسکے کارروائی مکمل کرے، عدالت عظمیٰ نے سانحہ اے پی ایس ازخود نوٹس نمٹاتے ہوئے قرار دیا کہ رپورٹ آنے پر ازخودنوٹس کیس بحال کیا جا سکتا ہے۔

واضح رہے کہ سانحہ آرمی پبلک اسکول کی تحقیقات کے لیے کمیشن چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کی ہدایت پر بنایا گیا ہے۔ کمیشن نے چند روز قبل سابق کور کمانڈر پشاور سمیت اعلیٰ فوجی اور پولیس افسران کو طلب کرنے کا مراسلہ بھی بھیجا تھا۔



ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔