سینیٹ کی آبی وسائل کمیٹی کا مہمند ڈیم کے ٹھیکے پر تحفظات کا اظہار

ویب ڈیسک  منگل 15 جنوری 2019
مہمند ڈیم  کا سنگ بنیاد رکھنے کے لیے آپ لوگ چیف جسٹس کی ریٹائرمنٹ کا انتظار کر رہے ہیں؟، سینیٹر حاصل بزنجو

مہمند ڈیم کا سنگ بنیاد رکھنے کے لیے آپ لوگ چیف جسٹس کی ریٹائرمنٹ کا انتظار کر رہے ہیں؟، سینیٹر حاصل بزنجو

 اسلام آباد: سینیٹ کی آبی وسائل کمیٹی نے مہمند ڈیم کی تعمیر کا ٹھیکہ وزیراعظم کے مشیر عبدالرزاق داؤد کی کمپنی کو دیئے جانے پر تحفظات کا اظہار ہے۔

اسلام آباد میں سینیٹ کی آبی وسائل کمیٹی کا اجلاس ہوا جس میں کمیٹی نے مہمند ڈیم کا ٹھیکہ مشیر تجارت عبدالرزاق داؤد کی کمپنی ڈیسکون کو دینے پر تحفظات کا اظہار کیا۔ چیئرمین کمیٹی سینیٹر شمیم آفریدی نے کہا کہ مہمند ڈیم ٹھیکے پر ہم مطمئن نہیں ہیں۔

کمیٹی کے رکن یوسف بادینی نے مہمند ڈیم ٹھیکے پر وزارت سے جواب طلب کرتے ہوئے کہا کہ کمیٹی کے آئندہ اجلاس میں مہمند ڈیم کا معاملہ ایجنڈے میں شامل کیا جائے، بلوچستان میں ڈیسکون کمپنی گروک ڈیم تو بنا نہیں سکی لیکن اب 300 ارب روپے کا منصوبہ دیا جا رہا ہے۔

حاصل بزنجو نے کہا کہ وزارت آبی وسائل کا چیف جسٹس سے کیا جھگڑا ہے ،سنگ بنیاد کی تقریب کیوں تاخیر سے کی جا رہی ہے، آپ لوگ چیف جسٹس کی ریٹائرمنٹ کا انتظار کر رہے ہیں؟۔

مہمند ڈیم کے سوال پر پی ٹی آئی رہنما ولید اقبال اور دیگر ارکان میں گرما گرمی بھی ہوگئی۔ ولید اقبال نے کہا کہ مہمند ڈیم ایجنڈے کا حصہ نہیں تو پھر اس پر بات کیوں ہو رہی ہے۔
کمیٹی نے آئندہ اجلاس میں مہمند ڈیم کی تعمیر اور معاہدے کے حوالے سے متعلقہ حکام سے بریفنگ طلب کرلی۔ چیئرمین کمیٹی نے ہدایت کی کہ حکام کمیٹی کے آئندہ اجلاس میں مکمل تیاری کے ساتھ آئیں۔



ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔