پاکستان میں قومی اداروں کی ساکھ عوام کی نظر میں متنازع ہوگئی، احسن اقبال

ویب ڈیسک  پير 21 جنوری 2019
پی ٹی آٸی کو کسی سے خطرہ نہیں اپنی نہ اہلی سے خطرہ ہے، سابق وزیرداخلہ  

پی ٹی آٸی کو کسی سے خطرہ نہیں اپنی نہ اہلی سے خطرہ ہے، سابق وزیرداخلہ  

لاہور: مسلم لیگ (ن) کے رہنما احسن اقبال کا کہنا ہے کہ آج پاکستان میں قومی اداروں کی ساکھ عوام کی نظر میں متنازع ہوگئی اور اس حکومت کی ہر برائی قومی اداروں پر ڈالی جاتی ہے۔

لاہور ہائی کورٹ بار کی جانب سے لگائے گئے کتاب میلہ میں شرکت کے موقع پر میڈیا سے بات کرتے ہوئے سابق وزیر داخلہ احسن اقبال کا کہنا تھا کہ ساہیوال کے واقعہ نے ہر پاکستانی کے دل کو دھلایا ہے، اس کی شفاف تحقیقات چاہتے ہیں، جے آئی ٹی کی رپورٹ سامنے آنے چاہیے کسی طرح کا دباو نہیں ہونا چاہیے اس کے بعد ہی کوئی حتمی رائے قائم کی جاسکتی ہے۔

احسن اقبال نے کہا کہ 70 سال بعد بھی ہم پینڈولم کی طرح کام کر رہے ہیں، اس ملک کو اگر قانون کےمطابق اور عوام کے مطابق نہیں چلائیں گے تو ملک قائداعظم کا پاکستان نہیں بنےگا، آج پاکستان میں قومی اداروں کی ساکھ عوام کی نظر میں متنازع ہوگئی، اس حکومت کی ہر برائی قومی اداروں پر ڈالی جاتی ہے، عوام میں جاتا ہوں تو ہر بندہ قومی اداروں کے بارے میں بات کرتا ہے، ہم ملک کے تمام اداروں کا احترام چاہتے ہیں۔

سابق وزیرداخلہ نے کہا کہ یہاں پر حکومتوں کوتوڑا جاتا ہے، ہم نے دھندلی والے انتخابات کو منظور کیا مگر کسی انتشار کو نہیں چاہتے تھے، پی ٹی آئی کو کسی سے خطرہ نہیں اپنی نہ اہلی سے خطرہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان انتظامی لحاظ سے مفلوج ہو چکا ہے، نئے چیف جسٹس نے جو بات کی ہے وہ اس بحران کی ہے جو ہمیں درپیش ہے، کرپشن کو فکس کر سکتے ہیں مگر ملک انتظامی لحاظ سے کمزور ہو تو اس کا ڈھانچہ خطرے میں پڑ جاتا ہے، ہم شفاف احتساب کی حمایت کرتے ہیں جب کہ ہم سب ماضی کی غلطیوں سے سبق سیکھیں اور جمہوریت کو مضبوط کرنے کے لیے مل کر کام کرنا ہوگا۔



ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔