آسٹریلیا کے بعد ویسٹ انڈیز ویمن کرکٹ ٹیم کے دورہ پاکستان پر بھی سوالیہ نشان

ویب ڈیسک  منگل 22 جنوری 2019
ویسٹ انڈین بورڈ حکام اور ویمن کرکٹرز کی نمائندہ ایسوسی ایشن میں مذاکرات جاری ہیں فوٹو : فائل

ویسٹ انڈین بورڈ حکام اور ویمن کرکٹرز کی نمائندہ ایسوسی ایشن میں مذاکرات جاری ہیں فوٹو : فائل

 لاہور: کرکٹ آسٹریلیا کے بعد ویسٹ انڈیز ویمن کرکٹ ٹیم کے دورہ پاکستان پر بھی سوالیہ نشان برقرار ہے تاہم ایک دو روز میں حتمی شیڈول کا اعلان کیا جاسکتا ہے۔

 پی سی بی نے ویسٹ انڈیز کرکٹ بورڈ سے ویمن ٹیموں کے  تین ٹی ٹوئنٹی میچز کراچی میں کھیلنے کا پروگرام بھجوا رکھا ہے، جس کے تحت مہمان ٹیم نے 26 جنوری کو کراچی پہنچنا ہے لیکن ابھی تک  ویسٹ انڈین بورڈ نے کراچی میں کھیلنے کا باقاعدہ اعلان نہیں کیا، پی سی بی حکام بھی اس حوالےسے  فیصلے کے منتظر ہیں۔

ویسٹ انڈین بورڈ حکام اور ویمن کرکٹرز کی نمائندہ ایسوسی ایشن کے درمیان اس سلسلے میں مذاکرات جاری ہیں، زیادہ تر کرکٹرز کراچی میں کھیلنے پرراضی ہیں، دوسرے کرکٹرز کو بھی منانے کی کوششیں جاری ہیں۔ ویمن ٹیم کی کپتان اسٹیفی ٹیلر پہلے ہی اپنی مصروفیات کو جواز بناکر اپنی عدم دستیابی سے بورڈ کو آگاہ کرچکی ہیں، جس کے بعد پاکستان کے خلاف سیریز کے لیے نئی کپتان کا انتخاب بھی نہیں کیا جاسکا۔

کراچی میں 31 جنوری، 1 اور 3 فروری کو ٹی ٹوئنٹی میچز کے بعد دونوں ٹیموں نے ون ڈے سیریز یواے ای میں کھیلنا ہے۔ پی سی بی نے آسٹریلیا کے ساتھ 2 ون ڈے میچز بھی پاکستان میں کرانے کی پلاننگ کرا رکھی ہے تاہم آسٹریلوی میڈیا کے مطابق کینیگروز ٹیم نے پاکستان جاکر کھیلنے سے معذرت کی ہے، اور اب پانچ ون ڈے میچز یواے ای میں ہی ہوں گے۔

دوسری طرف ترجمان پی سی بی کا کہنا ہے کہ ویسٹ انڈیز ویمن ٹیم اور آسٹریلوی ٹیم  کے ساتھ دو ون ڈے میچز پاکستان میں کھیلنے پر بورڈز کے ساتھ بات چیت جاری ہے تاہم ابھی تک کچھ فائنل نہیں ہوا۔



ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔