کراچی نیشنل اسٹیڈیم پر کام کے دوران 42سالہ مزدور چھت سے گر کر جاں بحق

زبیر نذیر خان  بدھ 23 جنوری 2019
جاں بحق ہونے والے مزدور کا تعلق پنجاب کے ضلع مظفر گڑھ سے ہے جو کراچی میں مزدوری کیلئے آیا تھا . فوٹو : فائل

جاں بحق ہونے والے مزدور کا تعلق پنجاب کے ضلع مظفر گڑھ سے ہے جو کراچی میں مزدوری کیلئے آیا تھا . فوٹو : فائل

کراچی کے نیشنل اسٹیڈیم پر کام کے دوران  42 سالہ مزدور کالو خان چھت سے گر کر جاں بحق ہوگیا۔

کراچی کے نیشنل اسٹیڈیم پر پاکستان سپر لیگ کی تیاریوں کے حوالے سے کام کے دوران 42سالہ مزدور کالو خان چھت سے گر کر ہلاک ہوگیا، کالو خان کا تعلق پنجاب کے ضلع مظفر گڑھ سے اور وہ 9 بچوں کا باپ ہے، منگل کی شب تزئین و آرائش سے گزرنے والے اسٹیڈیم میں مشتاق انکلوژر کی چھت پر پینٹ کرتے وقت کالو خان گر کر ہلاک ہوا، وہ اپنے بیٹے اور دیگر رشتے داروں کے ساتھ مزدوری کرنے کراچی آیا تھا۔

عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ مزدور 35 فٹ بلندی پر کام کے دوران چائے پینے کے لیے نیچے اترتے ہوئے پیر پھسل جانے کے سبب زمین پر آگرا اور سر پر چوٹ لگنے سے شدید زخمی ہوا جسے اسپتال منتقل کیا جارہا تھا کہ وہ زخموں کی تاب نہ لاسکا اور جاں بحق ہوگیا۔ مزدور کی موت پر اس کے ساتھی غم سے نڈھال نظر آئے جب کہ متعلقہ تعمیراتی ادارے کا مؤقف ہے کہ مزدور کام کے دوران حفاطتی آلات سے لیس تھا۔

دوسری جانب ذرائع کا کہنا ہے کہ مزدور کی ہلاکت کا معاملہ دبانے کی کوشش کی گئی اور کسی قانونی کارروائی کے بغیر ہی میت کو تدفین کیلئے اس کے آبائی علاقے روانہ کر دیا گیا۔ بعد ازاں اسے ضلع مظفر گڑھ کے چک چوک قریشی میں سپرد خاک کر دیا گیا۔

نمائندہ ایکسپریس کے مطابق ناخوشگوار واقعے کے باجود نیشنل اسٹیڈیم میں تعمیراتی اصولوں کے برخلاف حفاظتی اقدامات کو بالائے طاق نہیں رکھا گیا ہے اور مناسب انتظامات نہ ہونے کے سبب مزید جانی نقصان ہونے کے خدشات موجود ہیں۔

واضح رہے کہ ایکسپریس نے گزشتہ سال پی ایس ایل تھری سے قبل نیشنل اسٹیڈیم میں ہونے والے فیز ون کے تعمیراتی کام میں اس جانب توجہ مبزول کرائی تھی۔



ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔