کراچی اسٹاک مارکیٹ؛ انڈیکس پہلی بار 23428 پوائنٹس کی سطح پر پہنچ گیا

بزنس رپورٹر  ہفتہ 20 جولائ 2013
مارکیٹ سرمائے میں 72 ارب 90 کروڑ کا اضافہ، کاروباری حجم 31 فیصد زائد،23 کروڑ83 لاکھ حصص کا لین دین۔ فوٹو: پی پی آئی/فائل

مارکیٹ سرمائے میں 72 ارب 90 کروڑ کا اضافہ، کاروباری حجم 31 فیصد زائد،23 کروڑ83 لاکھ حصص کا لین دین۔ فوٹو: پی پی آئی/فائل

کراچی: کراچی اسٹاک ایکس چینج میں جمعہ کو بھی تیزی کا تسلسل قائم رہنے سے ملکی تاریخ میں پہلی بار انڈیکس23428 پوائنٹس بھی رقم کرگیا۔

تیزی کے باعث67.50 فیصد حصص کی قیمتیں بڑھ گئیں جبکہ حصص کی مالیت میں72 ارب90 کروڑ10 لاکھ81 ہزار871 روپے کا اضافہ ہو گیا، لسٹڈ کمپنیوں کی ریزلٹ ریلی شروع ہونے اور مختلف شعبوں کے حصص میں نئی ترجیحات کے تحت ہونے والی سرمایہ کاری نے مارکیٹ کے گراف کو بلندکیا، ٹریڈنگ کے دوران مقامی کمپنیوں، بینکوں ومالیاتی اداروں، انفرادی سرمایہ کاروں اور دیگر آرگنائزیشنز کی جانب سے مجموعی طور پر ڈالر مالیت کے سرمائے کا انخلا کیا گیا لیکن اسکے انخلا کے باوجود کاروبارکے تمام دورانیہ میں مارکیٹ مثبت زون میں رہی کیونکہ ٹریڈنگ کے دوران غیرملکیوں کی جانب سے 33 لاکھ 42 ہزار 940 ڈالر، میوچل فنڈز کی جانب سے8 لاکھ 3 ہزار747 ڈالراور این بی ایف سیز کی جانب سے9 لاکھ 10 ہزار 489 ڈالر مالیت کی تازہ سرمایہ کاری کی گئی۔

تیزی کے سبب کاروبارکے اختتام پر کے ایس ای100 انڈیکس 313.96 پوائنٹس کے اضافے سے 23428.93 ہوگیا جبکہ کے ایس ای30 انڈیکس 259.84 پوائنٹس کے اضافے سے 18330.01 اور کے ایم آئی 30 انڈیکس 488.61 پوائنٹس کے اضافے سے 40623.08 ہو گیا، کاروباری حجم جمعرات کی نسبت30.72 فیصد زائد رہا اور مجموعی طور پر23 کروڑ83 لاکھ30 ہزار290 حصص کے سودے ہوئے جبکہ کاروباری سرگرمیوں کا دائرہ کار360 کمپنیوں کے حصص تک محدود رہا جن میں243 کے بھاؤ میں اضافہ، 94 کے داموں میں کمی اور23 کی قیمتوں میں استحکام رہا۔

جن کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں نمایاں اضافہ ہوا ان میں وائتھ پاکستان کے بھاؤ 35.10 روپے بڑھ کر 1835.10 روپے اور آئسلینڈ ٹیکسٹائل کے بھاؤ30.40 روپے بڑھ کر640.40 روپے ہوگئے جبکہ کولگیٹ پامولیو کے بھاؤ 80 روپے کم ہوکر 1800 روپے اور باٹا پاکستان کے بھاؤ79 روپے کم ہو کر 1701 روپے ہوگئے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔