پاکستان اسٹیل نے ہنگامی بنیادوں پر بجلی کی پیداوار شروع کردی

بزنس ڈیسک  ہفتہ 20 جولائ 2013
پاکستان اسٹیل کے نئے چیف ایگزیکٹو آفیسر سعادت چیمہ آپریشنز بلڈنگ بن قاسم میں ادارے کے ہنگامی اجلاس کے دوران سینئر افسران سے خطاب کررہے ہیں۔  فوٹو: آن لائن

پاکستان اسٹیل کے نئے چیف ایگزیکٹو آفیسر سعادت چیمہ آپریشنز بلڈنگ بن قاسم میں ادارے کے ہنگامی اجلاس کے دوران سینئر افسران سے خطاب کررہے ہیں۔ فوٹو: آن لائن

کراچی: پاکستان اسٹیل مل کے نومنتخب چیف ایگزیکٹو آفیسر سعادت چیمہ نے کہا ہے کہ پاکستان اسٹیل مل نے ہنگامی بنیادوں پر اپنے ذرائع سے 28 سے 30 میگاواٹ بجلی پیدا کرنا شروع کردی ہے۔

بجلی کے مزید حصول کے لیے متعلقہ انتظامیہ کو فوری اقدامات کرنے کے احکام جاری کردیے ہیں۔ اپنے عہدے کا فوری چارج سنبھالنے کے بعد سعادت چیمہ نے پاکستان اسٹیل مل کے سینئرافسران سے ہنگامی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان اسٹیل مل پاکستان کی معیشت کے لیے ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتی ہے، ہمیں اس کی بحالی کے لیے سر جوڑ کر بیٹھنا ہوگا، پاکستان اسٹیل نہ صرف قومی ادارہ ہے بلکہ یہ ایک قیمتی اثاثہ بھی تصور کیا جاتا ہے جس کی بحالی کے لیے تمام قومی اداروں کو تعاون کرنا ہوگا۔ اجلاس میں چیف ایگزیکٹو کو موجودہ صورتحال کے بارے میں آگہی بھی فراہم کی گئی۔

چیف ایگزیکٹو پاکستان اسٹیل کو بتایا گیا کہ کے ای ایس سی کے ساتھ معاملات کو ہر ممکن حل کرنے کے لیے کوششیں کی جاری ہیں لیکن بدقسمتی سے کے ای ایس سی انتظامیہ کے جارحانہ رویے کی وجہ سے ہمیں مزید پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے، پاکستان اسٹیل مل کی جانب سے کے ای ایس سی کو 25 کروڑ روپے کی ادائیگی کے باوجود 132 KVA کی لائن بحال نہ کرنا باعث تشویش ہے، پاکستان اسٹیل مل انتظامیہ نے کے ای ایس سی کی جانب سے میڈیا ٹرائل اور غیر سنجیدہ بیانات کے بارے میں بھی چیف ایگزیکٹو کوآگاہ گیا۔

اس موقع پر سی ای او پاکستان اسٹیل مل نے چیف ایگزیکٹو کے ای ایس سی کو بجلی کی فراہمی کے لیے ایک مراسلہ بھی تحریر کیا۔ مراسلے میں کے ای ایس سی کے واجبات کی ادائیگی کے سلسلے میں تجاویز دی گئی ہیں۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ کے ای ایس سی اس سلسلے میں پاکستان اسٹیل مل کو اس مشکل صورتحال سے نکالنے کے لیے ضرور تعاون کرے گی کیونکہ پاکستان اسٹیل مل کے بحران کی وجہ سے نہ صرف قومی معیشت پر منفی اثرات مرتب ہورہے ہیں بلکہ اس سے وابستہ ہزاروں خاندانوں کا روزگار اور گھروں کے چولہے بھی ٹھنڈے ہورہے ہیں۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔