عالمگیر خان کا ایک بار پھر انوکھا احتجاج، وزیر اعلیٰ ہاؤس کے باہر گٹر کا پانی پھینک دیا

اسٹاف رپورٹر  پير 11 فروری 2019
وزیر اعلی سندھ سید مراد علی شاہ اور وزیر بلدیات سعید غنی شہر کی تباہی کے ذمہ دار ہیں، عالمگیر خان ۔ فوٹو : فائل

وزیر اعلی سندھ سید مراد علی شاہ اور وزیر بلدیات سعید غنی شہر کی تباہی کے ذمہ دار ہیں، عالمگیر خان ۔ فوٹو : فائل

 کراچی: فکس اٹ کے بانی عالمگیر خان نے شہر میں سیوریج کے مسائل پر ایک بار پھر انوکھا احتجاج کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ ہاؤس کے باہر گندا گٹر کا پانی لا کر پھینک دیا۔

تحریک انصاف کے رکن قومی اسمبلی عالمگیر خان نے شہر میں پانی، صفائی اور سیوریج کے مسائل حل نہ ہونے پر انوکھا احتجاج کیا اور وزیر اعلیٰ ہاؤس کے گیٹ کے باہر سیوریج کا پانی لاکر پھینک دیا۔

عالمگیر خان کا کہنا ہے کہ اس احتجاج کا مقصد سندھ کے نااہل حکمرانوں کو احساس دلانا ہے کہ کراچی کے لوگ کس گندگی میں زندگی گزار رہے ہیں، وزیر اعلی سندھ سید مراد علی شاہ اور وزیر بلدیات سعید غنی شہر کی تباہی کے ذمہ دار ہیں، اداروں کو خط لکھ لکھ کر تھک گیا ہوں لیکن مسائل کا حل کوئی نہیں دے رہا ہے۔

عالمگیر خان نے کہا کہ میں ان اداروں سے مایوس ہو چکا ہوں شہر میں جگہ جگہ سیوریج کا گندہ پانی کھڑا ہے، پہلے بھی مجھے احتجاج پر گرفتار کرلیا گیا تھا لیکن جہاں میرے وسائل ختم ہوں گے وہاں سے احتجاج شروع ہوگا۔



ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔