کراچی تجاوزات متاثرین کا متبادل دکانیں لینے سے انکار

ویب ڈیسک  بدھ 13 فروری 2019
ماضی میں کے ایم سی نے بھی غلطیاں کیں، وسیم اختر، فوٹو: فائل

ماضی میں کے ایم سی نے بھی غلطیاں کیں، وسیم اختر، فوٹو: فائل

 کراچی: تجاوزات کے خاتمے کے لیے جاری آپریشن کی زد میں آنے والے متاثرین میں شامل درجنوں تاجروں نے متبادل دکانیں لینے سے انکار کردیا ہے۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق  انسدادِ تجاوزات آپریشن کے متاثرہ کرائے داروں کے لئے متبادل دکانوں کی قرعہ اندازی کی تقریب بدنظمی کا شکار ہوگئی، کھوڑی گارڈن کے دکانداروں نے احتجاج کیا جب کہ 176 دکانداروں نے الاٹ منٹ لیٹر لینے سے انکار کردیا جس پر میئر کراچی وسیم اختر تقریب چھوڑ کر اپنے دفتر چلے گئے۔

یہ بھی پڑھیں: ہم نے گھر توڑنے کا حکم نہیں دیا

تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وسیم اختر نے کہا کہ ماضی میں کے ایم سی نے بھی غلطیاں کیں اور انسدادِ تجاوزات مہم سے ایم کیو ایم کا سیاسی نقصان ہوا تاہم سندھ حکومت کے ساتھ مل کر متاثرین کو متبادل مہیا کررہے ہیں۔

وسیم اختر نے کہا کہ کے ایم سی کے ایک ایک رجسٹرڈ کرائے دارکو متبادل جگہ فراہم کریں گے آج بیلٹنگ کے ذریعے آدھے متاثرہ دکانداروں کو جگہ فراہم کررہے ہیں اور کے ایم سی کے رجسٹرڈ دکانداروں اور کرایہ داروں کو ان کے اپنے اضلاع میں متبادل جگہ دیں گے۔



ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔