لاہور ہائی کورٹ نے شہباز شریف کی ضمانت منظور کرلی

ویب ڈیسک  جمعرات 14 فروری 2019
نیب نے سیاسی بنیادوں پر کیسز بنا کر گرفتار کیا، شہباز شریف

نیب نے سیاسی بنیادوں پر کیسز بنا کر گرفتار کیا، شہباز شریف

لاہور: لاہور ہائیکورٹ نے آشیانہ ہاؤسنگ اسکیم اور رمضان شوگر ملز میں سابق وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف کی ضمانت منظور کرتے ہوئے انہیں فوراً رہا کرنے کا حکم دے دیا۔ 

ایکسپریس نیوز کے مطابق لاہور ہائی کورٹ میں جسٹس ملک شہزاد احمد کی سربراہی میں دو رکنی بینچ نے قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف شہباز شریف اور سابق وزیراعظم نوازشریف کے پرسنل سیکریٹری فواد حسن فواد کی درخواست ضمانتوں پر سماعت کی اور فریقین کے دلائل مکمل ہونے پر فیصلہ کیا جو کچھ ہی دیر بعد سنادیا گیا۔

عدالت نے شہباز شریف کو آشیانہ ہاؤسنگ اسکیم اور رمضان شوگر ملز میں ضمانت منظور کرتے ہوئے انہیں فوری طور پر رہا کرنے کا حکم دے دیا۔ دوسری جانب عدالت نے فواد حسن فواد کی آشیانہ ہاؤسنگ اسکیم کیس میں ضمانت منظور ہوگئی جب کہ آمدن سے زائد اثاثوں کے کیس میں مسترد ہوگئی۔

عدالت کا فیصلہ حق اورسچ کی فتح ہے، شہباز شریف

دوسری جانب شہباز شریف نے کہا کہ عدالت کا فیصلہ حق اورسچ کی فتح ہے، اللہ تعالی کا شکر ادا کرتے ہیں کہ اس نے ایک مرتبہ پھر ہم پر کرم فرمایا۔

شہبازشریف کا کہنا تھا کہ میں اپنی والدہ ، بڑے بھائی نواز شریف، اپنے خاندان اور پاکستان کے عوام اور پاکستان مسلم لیگ (ن) کے کارکن کا بے حد شکرگزار ہوں کہ انہوں نے اپنی دعاؤں اور محبتوں میں مجھے یاد رکھا اور میری ہمت بندھاتے رہے، اپنے وکلاء کا بھی شکریہ ادا کرتا ہوں کہ انہوں نے شبانہ روز محنت اور جذبے سے مقدمہ تیار کیا اور اس کی پیروی کی۔

سابق وزیراعلیٰ پنجاب نے کہا کہ اللہ تعالی کے فضل و کرم سے ایک مرتبہ پھر ہر الزام میں سرخرو ہوں گے، ان شاء اللہ وہ دن دور نہیں جب الزام تراشیوں اور سیاسی انتقام کے بادل چھٹ جائیں گے، قوم اس دن کے منتظر ہیں جس دن نواز شریف ایک مرتبہ پھر ان میں ہوں گے۔

واضح رہے شہباز شریف نے آشیانہ ہاؤسنگ اسکیم اور رمضان شوگر مل کیس میں درخواست ضمانتیں دائر کر رکھی تھی جب کہ فواد حسن فواد نے آشیانہ ہاؤسنگ سکیم اور آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس میں درخواست ضمانتیں دائر کر رکھی تھیں۔



ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔